۳۰ دی ۱۴۰۰ |۱۶ جمادی‌الثانی ۱۴۴۳ | Jan 20, 2022
حرم امام رضا ع

حوزہ /فرزندرسول حضرت امام محمد تقی علیہ السلام کی شب شہادت   ایک نو جوان جاپانی تاریخ داں جس  نے کافی تحقیق کے بعد حضرت امام علی رضا علیہ السلام کے روضہ منورہ جیسی عظیم  و مقدس  بارہ گاہ سے بہت متاثر ہوہوکر مسلمان ہوگئے۔

حوزہ  نیوز ایجنسی  کی رپورٹ کے مطابق، 21 سالہ جاپانی جوان نے مسلمان ہوکر اپنا نام حسین  رکھا۔ اس موقع پر  نو مسلم جاپانی نوجوان نے کہا: مجھ کو چار مہینے ہوئے ہیں کہ میں جامعۃ المصطفی العالمیہ کی دعوت پر اپنے شہر ٹوکیو،جاپان سے تاریخ کےمضمون پر اپنی  تھیسز کو مکمل کرنے کے لیے ایران آیا ہوا تھا۔

اس نے کہا: ابتداء میں مطالعہ و تحقیق کے لیے فارسی سیکھنے کا مختصر کورس کیا اور اسی کے ساتھ ساتھ اسلامی دروس اور اسلامی تعمیرات و معماری کی بھی تعلیم حاصل کی۔

نوجوان نو مسلم جاپانی تاریخ داں حسین نے مزید کہا: میں جب پہلی مرتبہ مشہدمقدس اور حرم مطہررضوی میں مشرف ہوا تھا تو اس مقدس مقام کا عاشق و گرویدہ اور حرم  میں استعمال ہوئے فن معماری کا میں مجذوب ہوگیا ۔ 

انھوں نے کہا کہ  پہلی ہی نگاہ میں اس مقدس بارگاہ کو  معماری کے لحاظ سے  انتہائی  حیرت انگیز اور دیدہ زیب پایا تھا۔

انکا مزید کہنا تھا کہ تھیسز مکمل  ہونے کے بعد اپنے ساتھیوں کے ساتھ چاپان واپس گیا لیکن میں نے ارادہ کیا کہ ایران کے اس مقدس شہر میں کچھ اور زیادہ وقت گذاروں اور اس دین و مذہب کے بارے میں مطالعہ کروں، اور  آج جب پھر  اپنے وطن جانے کا ارادہ  کیا تو  حرم مطہر رضوی میں مشرف ہوا اور یہاں کے عالم دین سے گفتگو ہوئی تو میں نے ارادہ کیا کہ مسلمان ہوجاؤں لہذا میں نے اسلام کو قبول کرلیا ہے ۔

اس نو مسلم جاپانیجوان نے مزیدکہا: حرم مطہررضوی دنیا بھر میں شیعوں کا  ایک عظیم ترین مذہبی و ثقافتی مرکز ہے اور  بہت  ہی ممتاز و خصوصیت کا حامل ہے؛ یہ مقدس بار‌گاہ  اسلامی معماری و ہنر  کا بہترین امتزاج ہے  کہ جس کی معنویت ہر انسان کے ذہن و قلب کو خداکی طرف کھینچتی ہے ۔  

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
5 + 2 =