۲۹ دی ۱۴۰۰ |۱۵ جمادی‌الثانی ۱۴۴۳ | Jan 19, 2022
حوزہ علمیہ آیۃ اللہ خامنہ ای،بھیک پور،بہار میں، طرحی محفل مقاصدہ

حوزہ/ قرآن وعترت فاونڈیشن کے بانی وموسس حجۃالاسلام والمسلمین سید شمع محمد رضوی نے اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ آج شب ولادت امام حسن ؑ کے سلسلے سے""حوزہ علمیہ آیۃ اللہ خامنہ ای،بھیک پور،بہار""میں ولادت امام حسنؑ کے موقع پرایک طرحی محفل مقاصدہ کااہتمام کیا گیا۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،حوزہ علمیہ آیۃ اللہ خامنہ ای،بھیک پور،بہار میں، طرحی محفل مقاصدہ "آو صلح حسن کی بات کریں" کے عنوان سے منعقد ہوا۔

قرآن وعترت فاونڈیشن کے بانی وموسس حجۃالاسلام والمسلمین سید شمع محمد رضوی نے اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ آج شب ولادت امام حسن ؑ کے سلسلے سے""حوزہ علمیہ آیۃ اللہ خامنہ ای،بھیک پور،بہار""میں ولادت امام حسنؑ کے موقع پرایک طرحی محفل مقاصدہ کااہتمام کیاگیا، محفل مسرت تلاوت کلام پاک سے شروع ہوئی جسے مولوی فیضان علی گورکھپوری نےاس ماہ مبارک میں نازل شدہ قرآن سے نورانی فضاکا ماحول بنایا،یقینا دینی فعالیت میں شعروسخن کاایک اہم کردار رہا ، چونکہ شعری مفاہیم منٹوں میں لمحوں کا سفر طے کرتا ہے۔

تصویری جھلکیاں:  حوزہ علمیہ آیۃ اللہ خامنہ ای،بھیک پور،بہار میں، طرحی محفل مقاصدہ

جمہوری اسلامی ایران کے لیڈراورولی امرمسلمین حضرت آیۃ اللہ العظمیٰ سید علی خامنہ ای مدظلہ العالی نے شعروشاعری کے قدم کوبہت سراہااورجہاں تمام لوگوں کوچاہتے ہیں وہاں شعراع کرام کابھی بھرپور استقبال کرتے ہیں،کیونکہ ایمہ معصومین ؑ نے دعبل فرزدق اوراسی طرح دیگرشخصیتوں پہ نظرکرم کی،سرزمین ایران میں پوری طاقت سے شب ولادت امام حسن ؑ شعراع کابیحدخصوصی احترام واستقبال کیاجاتاہے،بلکہ سبھی حضرات رہبر معظم آیۃ اللہ خامنہ ای مدظلہ العالی کی خدمت میں جمع ہوتے ہیں اور اپنے فن کااظہارکرتے ہیں،جیساکہ سبھی  شعرائے کرام اس بات کو بخوبی جانتے ہیں کہ حجۃ الاسلام والمسلمین سید شمع محمدرضوی رہبر معظم کی نظرکوعملی جامعہ پہناکرتمام شعراع اہلبت ؑکا استقبال کیاکرتے ہیں اور طول سال میں ہمیشہ طرحی محفل مقاصدہ اور سمینار کا اہتمام کیا کرتے ہیں،خداوند عالم ضروراس محنت کوقبول کریگا،اسی سبب آج سرزمین بہارکے بھیک پورمیں طرحی محفل مقاصدہ کاپروگرام منعقدہوا،اس پروگرام میں افتتاحی تقریر خطیب اہل بیت عالیجناب مولاناسید تقی رضا رضوی نے  کی  اوراختتامی تقریر حجہ الاسلام والمسلمین سبط حیدراعظمی نےکی،افتتاحی تقریرمیں مولاناموصوف نےشجاعت امام حسن ؑ پرروشنی ڈالی آپ نے فرمایا!امام حسنؑ کی شجاعت کادشمن بھی کلمہ پڑھاکرتے تھےجسے (با قر القرشی،ج١،ص ٣٠٢ ،ط٢،ابن شہرآشوب ،ج٤،ص ٢١،ابن واضح تاریخ یعقوبی،ج٢،ص ١٧٠،۔ابن قتیبہ دینوری،الامامة و السیاسة ،ج١،ص ٦٧)(ابو حیفۂ دینوری ،الاخبار الطوال،ص١٤٤۔١٤٥ ،ط١، قاہرہ ، دار احیاء الکتب العربی ۔۔۔ابن اثیر الکامل فی التاریخ ، ج٣،ص ٢٣١)،( ابن ابی الحدید شرح نہج البلاغہ،ج١١،ص ٢٥ (خطبۂ ٢٠٠)،قاہرہ) نے ذکر کیاہے آپنے یہ ذکر کیاکہ!حضرتؑ ہرجنگ میں  اپنےوالد ماجد کےساتھ رہ کردشمنوں پربڑھ بڑھ کرسخت حملے کئے ، آپ نے کوفہ میں بھی اسلام دشمنوں کے خلاف  ایسی زبردست تقریر کی جس کی وجہ سے دشمن ناکام اوراسکااصلی چہرہ لوگوں کے سامنے آگیا۔

حجہ الاسلام والمسلمین سبط حیدراعظمی نے بھی اپنی تقریر میں فرمایا کہ! لوگ سوچتے ہیں کہ امام حسنؑ نے صلح کیوں کی؟ توآپ نے اس واقعہ کودہرایا کہ جب ایک شخص نے پانچویں امام محمد باقر علیہ السلام سے گفتگوکرتے ہوئے امام حسنؑ کی صلح پر اعتراض کیا جس کا جواب امام نے اس طرح سے دیا کہ اگر امام صلح نہ کرتے تو ایک بہت بڑا خطرہ پیش آتا۔۔۔۔ آپ نے اپنی تقریرمیں مزیدفرمایا!حضرت محمدمصطفےٰص کے دونوں نواسوں نے ناناکی اہم اورمہم چیزلی ایک نے صلح تودوسرے نے جنگ کی جسےابن اثیر الکامل فی التاریخ ،ج٣،ص ۴۰۹،نے ذکر کیاکہ حضرت محمدص کی حیات میں دورخ ملتے ہیں،آنحضرت ۖنےجنگ بدر،احزاب اورحنین وغیرہ میں تلوار اٹھائی کیونکہ دیکھ رہے تھے کہ کامیابی مل سکتی ہے ۔ لیکن جب یہ دیکھا کہ ہدف تک پہونچنا مشکل ہے اورکامیابی ناممکن ہوتی جارہی ہے تو پھر بنی اشجع ،بنی ضمرہ اور اہل مکہ سے حدیبیہ میں صلح کرنے پر تیار ہوگئے۔۔۔۔ یہی وجہ تھی کہ جب امام حسنؑ  نے صلح کی،،،حضرت  محمدص کی اتباع کرتے ہوئے امام حسن نے صلح کو اپنایا اور امام حسینؑ نے جنگ کو۔

پروگرام میں مقالہ خوانی،سوالات وجوابات اوراس طرح سے دیگرفعالیتوں کے ساتھ دیے گئے مصرعہ (آو صلح حسن کی بات کریں)طرحی محفل مقاصدہ کابھی سلسلہ جاری رہا۔

محترمہ رضوانہ خاتون کاکلام ؎         رضوی صاحب نے پڑھا: ؎ میل کی اورملن کی بات کریں،،یعنی اونچائی پن کی بات کریں۔۔۔۔۔۔۔جس نے مردہ دلوں کوزندہ کیا        کیوں نہ اس بے وطن کی بات کریں ۔۔۔۔۔مثل بہلول آپ بھی کہیے ،،مجھ سے بس پنجتن کی بات کریں ۔۔۔۔یہ جوانوں کوبھی نصیحت ہے ،،مذہبی دل لگن کی بات کریں۔۔۔       ساری دنیاکومارنے والوں،، آوصلح حسن کی بات کریں۔۔۔۔انبیاع اوصیاع چلے آئیں،، جب امام حسن کی بات کریں۔۔۔نام میراہوامحمدعلی،،کیوں نہ ہم پنجتن کی بات کریں۔۔۔   ۔۔۔۔

کرارحسین سلمہ نے بھی بڑے ہی مخصوص لب ولہجے میں شعرپڑھے!  ۔۔۔۔۔۔۔         

ندیم ندیمی نے بھی اپنے خاص اندازمیں پڑھا! جب بھی کربل کے بن کی بات کریں ،،یعنی شاہ زمن کی بات کریں۔۔۔۔بات وہ کررہے ہیں کرکٹ کی،کربلاکے صحن کی بات کریں۔۔۔ حق توحقدارکااداکرلو،،بعدمیں  پھرحسن کی بات کریں۔۔۔۔بھائی عباس کاکریں چرچہ،،اورزینب بہن کی بات کریں۔۔۔۔ غیبتیں چھوڑکرکے رمضاں میں،،آوصلح حسن کی بات کریں۔۔۔۔۔رشک سب جنتی کرینگے بہت، آو صلح حسن کی بات کریں۔۔۔۔۔ 

ممتازبھیک پوری!فاطمہ کے رتن کی بات کریں،آج ہم سب حسن کی بات کریں۔۔۔۔وہ ثقیفائی پن کی بات کریں،ہم حسینی مشن کی  بات کریں۔۔۔۔کام آجایے دین پرجس سے،بس خدیجہ سے دھن کی بات کریں۔۔۔مختصربحرمیں ملامصرعہ،کیسے ہم اپنے  فن کی بات کریں۔۔۔بچہ روزہ ہے گھرمیں ہیراکے،آج نورانی جن کی بات کریں۔۔۔ جسکا جھولاجھولانے آئے ملک،آج اس گلبدن کی بات کریں۔۔۔جانوردے گئے ہیں درس وفا،ہم نہ کیونکر ہرن کی بات کریں۔۔۔جنگ کافن بتاگئے ہیں علی،آوصلح حسن کی بات کریں۔۔۔۔میں توہرچیز میں رہاممتاز،آپ اپنے  گھٹن کی بات کریں۔۔۔۔

انتظاررضوی:؎کیوں نہ اہل سخن کی بات کریں،ہرگھڑی پنجتن کی بات کریں۔۔۔دے گئے درس میثم تمار۔حق کے دارورسن کی بات کریں۔۔ہنس کے گردن پہ کھائے تیرجفا،اصغرگلبدن کی بات کریں۔۔۔چودہ صدیاں گزرگئیں پھربھی،آج عصرحسن کی بات کریں،۔۔۔۔آگئے ہیں مباہلے کے لئے،ہم اسی مردوزن کی بات کریں۔۔ آئی آوازانتظارکرو،آئینگے انکے من کی بات کریں۔۔۔

یعسوب رضوی :  اس زمیں اس چمن کی بات کریںِ،،مصطفیٰ کے وطن کی بات کریں۔۔۔اہل فن ہم ہیں فن کی بات کریں،،آواہل سخن کی بات کریں۔۔مصطفےٰ       وعلی وزہرہ کی،،اورحسین وحسن کی بات کریں۔۔۔جسمیں اتری ہے آیہ تطہیر،،آج اس انجمن کی بات کریں۔۔۔جس چمن میں کھلاہے پہلاپھول،،کیوں نہ ہم اس چمن کی بات کریں۔۔۔صلح احمد کاآئینہ دیکھو،،آوصلح حسن کی بات کریں ۔۔۔ ۱۵رمضاں کی شب میں اے یعسوب،،فاطمہ کے للن کی بات کریں۔۔۔۔

مشہورسوزخوان غلام نجف رضوی: جب حسین وحسن کی بات کریں،،فاطمہ کے چمن کی بات کریں۔۔۔۔۔آرزوں کی مشک ہوپرآب،،تشنہ لب ذوالمنن کی بات کریں۔۔۔خلعت خلق بھی معطر ہو،،تتلیاں گلبدن کی بات کریں۔۔۔عاشقوں عبرتیں یں الفت کی،،آو صلح حسن کی بات کریں۔۔۔۔سدرۃ المنتھیٰ تاخانہ حق،،چرخ شاہ زمن کی بات کریں۔۔۔ہم جوٹہرے حسن کے دیوانے،،پھرنہ کیونکرحسن کی بات کریں۔۔۔۔جوبھی قسمت سے پائے درنجف،حیدری کیوں نہ من کی بات کریں۔۔۔

فیض علی فیضی بھیک پوری:نہ تکبرنہ غن کی بات کریں،،آج حسن حسن کی بات کریں۔۔پہلے ہم علم وفن کی بات کریں،،تب کمال حسن کی بات کریں۔۔۔۔خامشی کوبنادے جوتقریر،،ایسے اہل سخن کی بات کریں۔۔۔جس نے توڑاملوکیت کاتب،،آج اس بت شکن کی بات کریں۔۔۔سب کریں انکی بات اوریہ خود،،خالق  ذوالمنن کی بات کریں۔۔۔  ہے ہوائے بہشت کی آمد،،کیوں فضامیں گھٹن کی بات کریں۔۔۔ذکرخاروں کاکیوں کریں ہم لوگ،،آبروئے چمن کی بات کریں۔۔۔سن کے قرآن مسکرائے گا،،جنتی مردوزن کی بات کریں۔۔۔ہم جلائیں گے مدحتوں کاچراغ،،جلنے والے جلن کی بات کریں۔۔۔۔کچھ نہ ہوجسمیں اختلاف نظر،،آپ اس انجمن کی بات کریں۔۔۔چاہے تم اہلبیت جسکوکہو،،مصطفیٰ پنجتن کی بات کریں،،ہیں جوامن وامں کے دشمن،،وہ بھلاکیوں حسن کی بات کریں۔۔۔۔  دیکھیں فاتح قلم ہے یاشمشیر،،آوصلح حسن کی بات کریں۔۔۔جب سخاوت کادیکھ لیں انداز،،خاندانی چلن کی بات کریں۔۔۔۔موت کاذایقہ بناناہے،،قاسم خوش دہن کی بات کریں۔۔۔خاک ہے جس جگھ کی خاک شفا،،ہم قہاں کے کفن کی بات کریں۔۔۔ہیں حکومت کے کارخانے کی،،کیاصحاح وسنن کی بات کریں۔۔۔ایسے راوی ہمیں قبول نہیں،،،جوسدااپنے من کی بات کرے۔۔۔۔جنگ میں منھ کی کھاگئے جولوگ،،کس زباں سے یمن کی بات کریں شعرمیں نثرمیں دعاوں میں،،ہم امام زمن کی بات کریں۔۔۔۔۔

ڈاکٹر اعجازبھیک پوری:؎       جب بہارچمن کی بات کریں،،باوضوپنجتن کی بات کریں۔۔۔۔غیرجب راہزن کی باات کریں،،ہم توخیبر شکن کی بات کریں۔۔۔ مصطفےٰ پیرہن کی بات کریں،،جب خدیجہ کفن کی بات کریں۔۔۔ ذکر جب ہونبی سے رشتے کا،،ان سے کہدوچلن کی بات کریں۔۔۔۔جب کرے بات کوئی جنت کی،،واں حسین وحسن کی بات کریں۔۔۔کیامرض کاگلاہوہوجبکہ نبی،،خودہی ضعف بدن کی بات کریں۔۔۔۔۔جنکوحق العبادیادنہیں،،کس طرح وہ وطن کی بات کریں۔۔۔عام ہومقصد حسین مگر،،پہلے زینب بہن کی بات کریں۔۔۔اب نہ رنج ومحن کی بات کریں،،جشن مولاحسن کی بات کریں ۔۔۔۔ جسمیں دیدی نبی نے اپنی زباں،،کیوں نہ ہم اس دہن کی بات کریں۔۔۔۔ کس پہ مولاحسن کافیض نہیں،،انس وجن مردوزن کی بات کریں۔۔۔کہنافیض حسن کااک قطرہ،،جب وہ گنگ وچمن کی بات کریں۔۔۔۔جوہے تاریکیوں پہ مثل کفن،،آج اس ضوفگن کی بات کریں۔۔۔موت کاجب مزہ کوئی پوچھے،،قاسم گلبدن کی بات کریں   ۔۔۔۔ سب ہیں باطل معاویہ جیسے،،آوصلح حسن کی بات کریں۔۔۔۔  اپنی اعجازارتقاکےلئے،،کہدووہ اہل فن کی بات کریں۔۔۔

مولاناسبط حیدرسمندپوری![۱]مومنوں پنجتن کی بات کریں،مصطفےٰ کے چمن کی بات کریں۔۔ [۲]معاویہ کی بڑھے پریشانی،،آو صلح حسن کی بات کریں۔۔[۳]سرپہ آپہوچاہے محرم بھی،،ماتمی انجمن کی بات کریں ۔۔[۴] ہرقدم پرثواب ملتاہے    ،،کیوں نہ شاہ زمن کی بات کریں۔۔۔[۵] اب زمانہ نہیں لڑائی کا،،ہرگھڑی فکروفن کی بات کریں۔۔[۶] کامیابی نصیب ہونی ہے   ،،گرحسینی مشن کی بات کریں۔۔۔[۷] ہرحسینی کاہے شعاریہی ،،کربلاکے کفن کی بات کریں۔۔[۸]زینبی گھراگربناناہے  ،،     شاہ دیں کے بہن کی بات کریں                    ۔۔[۹] دوراسلام سے جورہتے ہیں،،جھوٹ کی بدچلن کی بات کریں                                             ۔۔۔[۱۰]مجھکوخاروں سے دوررہناہے،،گلستان چمن کی بات کریں۔۔۔۔[۱۱] حق کے دامن کوگرسمجھناہے،،یوسفی پیرہن کی بات کریں۔۔ [۱۲] جوبھی میدان میں غدیرکے تھے،،وہ بھی دیوانہ پن کی بات کریں              ۔۔[۱۳]چھوڑکے سارے لوگوں کی باتیں  ،،بس بقیع کے صحن کی بات کریں۔۔۔[۱۴] ہے ضرورت بہت توجہ کی        ،،اسلئے فکروفن کی بات کریں                       ۔۔۔[۱۵] طوق وبیڑی پہن کے یادخدا     ،،عابدخستہ تن کی بات کریں۔۔[۱۶] میثمی عزم گرپسندکیا            ،،پھرتودارورسن کی بات کریں۔۔۔[۱۷] ساری باتوں کوبھول جاناہے،،مجتبیٰ کے سخن کی بات کریں۔۔[۱۸] شہرسے دورپن کی بات کریں  ،،کربلاکے چمن کی بات کریں                    ۔۔۔[۱۹] بڑھکے بولی ہے آیہ تطہیر ،،ہم کساع کے بدن کی بات کریں                                              [۲۰] جوخداپرنہیں بھروسہ کریں      ،،  وہ شکنجہ گھٹن کی بات کریں۔۔[۲۱] فکرخودکی نہیں ہے غیروں کے ،،چال کی اورچلن کی بات کریں۔۔۔[۲۲] آپ سے ہوگاکچھ نہیں شکوہ   ،،آپ اپنے چلن کی بات کریں                                              ۔۔[۲۳]میراشجرہ ملامدینہ سے         ،آپ اپنے وطن کی بات کریں            [۲۴]دودھ میں پانی ڈالنے والے ،،کیسے حق لبن کی بات کریں۔۔۔[۲۵] اپنی نامردی کادیا ہے ثبوت،،دایما فتنہ پن کی بات کریں۔۔۔۔۔۔                                       

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
5 + 7 =