۲ آبان ۱۳۹۹ | Oct 23, 2020
آیت اللہ العظمی حافظ بشیر نجفی کی خدمت میں معاون خصوصی وزیر اعظم پاکستان

حوزہ/ پاکستان سےاقتصادی وصناعتی تعلقات کو بہتربنائیں اسلئےکہ پاکستان اس میدان میں عراق کی بہتر انداز میں مدد کرسکتا ہےاورمناسب اور سستی قیمتوں پر اسکی ضروریات کی فراہمی کو یقینی بناسکتا ہے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، حضرت آیۃ اللہ العظمیٰ الحاج حافظ بشیر حسین نجفی نے مرکزی دفترنجف اشرف میں اسلامی جمہوریہ پاکستان کے وزیراعظم جناب عمران خان کےمعاون خصوصی جناب ندیم افضل چن کا خیرمقدم کرتےہوئے انکی معصومین علیھم السلام کی زیارات بارگاہ خداوندی میں مقبول ہوں اسکے لئے دعائیں فرمائی اوران سےاپنی نصیحتوں میں فرمایا کہ حکومت پاکستان کاعراق اوردیگر عرب ممالک کے ساتھ اقتصادی تعاون قائم کرنا اورموجودہ تعلقات کو فروغ دینا اولین مقصد ہونا چاہئے، اس کے لئےآپ کو قدم بڑھانا چاہئےاسلئےکہ عراق پاکستان کےمقابل ایک چھوٹا ملک ہے۔

لیکن خدا نےاسے تیل، زرنیخ (آرسینک)اور یورونیم جیسی نعمات سے نوازا ہے، دنیا کی بڑی طاقتیں عراق سے اپنے تعلق بہتر کرکے اس سےفائدہ اٹھا رہی ہیں اورمزید اٹھانا چاہتی ہیں۔

لہذا آپ بھی قدم بڑھائیں اورتعلقات کو استوارکریں، میں اپنی جانب سےعراق کے سربراہان حکومت کو نصیحت کرچکا ہوں اورکرتا رہونگا کہ وہ پاکستان سےاقتصادی وصناعتی تعلقات کو بہتربنائیں اسلئےکہ پاکستان اس میدان میں عراق کی بہتر انداز میں مدد کرسکتا ہےاورمناسب اور سستی قیمتوں پر اسکی ضروریات کی فراہمی کو یقینی بناسکتا ہےلیکن حکومت پاکستان کو بھی چاہئے کہ وہ تمام شعبوں میں خاص کراقتصادی و صنعتی تعلقات کو مزید بہتربنائیں اور وہ چیزیں جو عراق میں نہیں ہیں جیسے بجلی کی فراہمی میں بہتری، چاول،اگر کسی دوسرے ملک سےیہ چیزیں آتی ہیں تو آپ اس سے کم قیمت پرعراق کو فراہم کر سکتے ہیں اور اسکے بدلےعراق کے پاس جو نعمات ہیں جیسے تیل وغیرہ اورجسکی پاکستان کو ضرورت بھی ہے اس سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں اسکےعلاوہ صنعت کے شعبے میں کم مدت اورکم قیمت پرعراق میں صنعتی کمپنیاں لگائی جاسکتی ہیں جس سےعراقیوں کو روزگار بھی ملےگا اور پاکستان اقتصادی طور پرفائدہ اٹھاسکےگا۔

اس خصوصی ملاقات میں عتبات عالیات اورمقامات مقدسہ کی زیارت کو آنے والے زائرین کے امور بھی زیر بحث آئے جس پر آیت اللہ حافظ بشیر نجفی نے مہمان سے اس حوالے سے اپنا نظریہ بیان فرمایا اورامید کا اظہارکیا کہ زائرین کی تمام مشکلات کا مناسب حل نکلےگا۔

اپنی جانب سے محترم ندیم افضل چن نے مرجع عالیقدر دام ظلہ الوارف کا قیمتی وقت دینے اورنصیحتوں پرشکریہ ادا کیا اورانکی نصیحتوں کو وزیر اعظم پاکستان کی خدمت میں پہنچانےکی یقین دہانی کرائی۔

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
3 + 0 =