۲۸ خرداد ۱۴۰۳ |۱۰ ذیحجهٔ ۱۴۴۵ | Jun 17, 2024
جنرل حسین سلامی

حوزہ/ایرانی پاسداران انقلاب فورس کے کمانڈر نے اس بات پر زور دیا ہے کہ دشمن کی ہتھیاری پابندیاں ہماری دفاعی پوزیشن پر کوئی اثر نہیں ڈال سکتی ہیں اور ہم آج سپاہ پاسداران کی زمینی فوج میں کسی بھی ہتھیاروں کے نظام میں غیر ملکیوں پر انحصار نہیں کر رہے ہیں اور خود انحصاری اور آزادی کے مرحلے پر پہنچ چکے ہیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،ایرانی پاسداران انقلاب فورس کے کمانڈر نے اس بات پر زور دیا ہے کہ دشمن کی ہتھیاری پابندیاں ہماری دفاعی پوزیشن پر کوئی اثر نہیں ڈال سکتی ہیں اور ہم آج سپاہ پاسداران کی زمینی فوج میں کسی بھی ہتھیاروں کے نظام میں غیر ملکیوں پر انحصار نہیں کر رہے ہیں اور خود انحصاری اور آزادی کے مرحلے پر پہنچ چکے ہیں۔

یہ بات بریگیڈیئر جنرل "حسین سلامی" نے ہفتہ کے روز سپاہ کی برّی فوج کی خود کفیل تحقیق اور جہاد تنظیم کی کامیابیوں کی نمائش کے دورے کے موقع پر کہی۔
انہوں نے اسلامی انقلاب اور ایرانی قوم کے خلاف دشمنوں کی ظالمانہ پابندیوں کو خصوصا اسلحہ کے میدان میں ایک موقع کے طور پر قرار دیتے ہوئے کہا کہ جب ہم ہتھیاروں کے عالمی پابندیوں اور امریکہ جیسے حقیقی دشمنوں کا سامنا کررہے ہیں تو ، مقامی صلاحیتوں کو استعمال کرکے دفاعی شعبے کی ضروریات کا دفاع کرنا ایجنڈے میں شامل ہے۔
جنرل سلامی نے کہا کہ ہم آج سپاہ پاسداران کی زمینی فوج میں کسی بھی ہتھیاروں کے نظام میں غیر ملکیوں پر انحصار نہیں کر رہے ہیں اور خود انحصاری اور آزادی کے مرحلے پر پہنچ چکے ہیں۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہم حیرت انگیز سسٹمز کی آمد کا مشاہدہ کریں گے اور ہماری برّی فوج ایجنڈے پر تکنیکی حیرت ڈال دی ہے تاکہ جدید ٹکنالوجی کی کمی نہ رہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .