۶ آذر ۱۴۰۰ |۲۱ ربیع‌الثانی ۱۴۴۳ | Nov 27, 2021
آغا سید مجتبیٰ عباس الموسوی الصفوی

حوزہ/ آغا سید مجتبیٰ عباس الموسوی الصفوی نے جانوروں کی قربانی پر پابندی کے حکم نامے کو دینی معاملات میں مداخلت کی ایک اور کڑی قرار دیتے ہوئے کہا کہ مسلم اکثریتی جموں و کشمیر میں اس طرح کے شریعت مخالف حکم ناموں کی کوئی گنجائش نہیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،سلسلہ امامت کی پانچویں کڑی حضرت امام محمد باقرؑ کے یوم شہادت کے موقعہ پر جموں و کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے آستان میر شمس الدین اراکیؒ چاڈورہ میں مجلس عزا کا انعقاد کیا گیا۔جسمیں ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مندوں نے شرکت کی عزاداروں کے بھاری اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے حجت الاسلام و المسلمین آغا سید مجتبیٰ عباس الموسوی الصفوی نے امام محمد باقر  ؑکے سیرت طیبہ اور کردار و عمل کے مختلف گوشوں کی وضاحت کی۔

امام عالی مقام ؑ کے علمی کمالات اور تدریسی خدمات کو تاریخ اسلام کا درخشان باب قرار دیتے ہوئے آغا مجتبیٰ نے کہا کہ اما عالی مقام ؑ سے شرف تلمذ حاصل کرنے والوں میں دنیاے اسلام کے بہت سے بلند پایہ محدثیں و مفسرین شامل ہیں اور اکثر تفاسیر کے ماخذ اور سرچشمہ امام محمد باقر  ؑ کی برگزیدہ ذات ہے آپ ؑ نے تدریسی و علمی خدمات کے ساتھ ساتھ دین و شریعت کی پاسداری اور بالادستی کے لئے حکمرانوں کے غیض و غضب سے لاپرواہ ہو کر مجاہدانہ کردار ادا کیا اور یہی راہ و روش امام ؑ کی شہادت کا محرک بنی۔

آغا مجتبیٰ عباس نے واضح کیا کہ شریعت کے معاملوں میں حکومتی مداخلت کا کوئی جواز نہیں بڑے جانوروں کی قربانی پر پابندی کے حکم نامے کو دینی معاملات میں مداخلت کی ایک اور کڑی قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسلم اکثریتی جموں و کشمیر میں اس طرح کے شریعت مخالف حکم ناموں کی کوئی گنجائش نہیں۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
2 + 5 =