۵ تیر ۱۴۰۳ |۱۸ ذیحجهٔ ۱۴۴۵ | Jun 25, 2024
علامہ ساجد نقوی 

حوزہ / اقوام متحدہ فلسطین اور تمام متنازعہ خطوں میں امن کیلئے کردار ادا کرنیوالوں کے تحفظ کے ساتھ مظلوم اقوام معذرت خواہانہ رویے کی بجائے جرأتمندانہ و قائدانہ کردار ادا کرے۔ دنیا میں امن تب قائم ہوگا جب طاقت کا توازن درست ہو، اس کیلئے بھی ضروری ہے کہ پاکستان کو توانا اور مستحکم رکھا جائے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کے مطابق، قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے 28 مئی یوم تکبیر پاکستان کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ پاکستان دنیا اور بالخصوص اسلامی دنیا میں ایٹمی پاور کے طور پر ابھرا، یہ ایک غیر معمولی کارنامہ ہے۔

پاکستان کے ایٹمی پاور بننے کے بعد ارض وطن کو بین الاقوامی مقام و حیثیت حاصل ہوئی جسے برقرار رکھنے کیلئے ہر لحاظ سے داخلی استحکام انتہائی ضروری ہے۔

انہوں نے 1948ء کے ا علان کردہ29 مئی امن پسندو ں کے عالمی دن (ورلڈ پیس کیپر ڈے)پر کہاکہ دنیا میں امن تب قائم ہوگا جب طاقت کا توازن درست ہو، اس کیلئے بھی ضروری ہے کہ پاکستان کو توانا اور مستحکم رکھا جائے۔

انہوں نے اقوام متحدہ کو متوجہ کرتے ہوئے کہا: اقوام متحدہ ایام کے اختصاص کے ساتھ جنگی و متنازعہ علاقوں میں انسانی حقوق، امن و آگہی اور آزادی اظہار کیلئے خدمات انجام دینے والوں کے تحفظ کو بھی یقینی بنائیں اور اس کے ساتھ ہی فلسطین سمیت جن خطوں میں آج بھی بدامنی اور انارکی کی صورتحال ہے۔

ان تصفیوں کے حل کیلئے معذرت خواہانہ کی بجائے قائدانہ اور جرأتمندانہ کردار بھی ادا کرے، فلسطین میں ظلم کے پہاڑ توڑے گئے، عالمی عدالت انصاف کا فیصلہ بھی آگیا، پوری دنیا استعماری مظالم پر چیخ اٹھی مگر افسوس اقوام عالم کے ایوان اقتدار آج بھی بے حسی کی تصویر بنے ہوئے ہیں جو بنیادی طور پر اقوام متحدہ کی ہی ناکامی ہے

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .