۵ بهمن ۱۴۰۰ |۲۱ جمادی‌الثانی ۱۴۴۳ | Jan 25, 2022
متحدہ عرب امارات کی شیعہ تارکین وطن

حوزہ/ اسرائیل کو تسلیم کرنے کے بعد متحدہ عرب امارات کےخائن حکمران بھی آل سعود کی طرح شریعت محمدی کی پامالی میں مصروف ہوگئے ہیں اور 1 جنوری 2022 سے متحدہ عرب امارات میں شادی سے قبل جنسی تعلقات کو جائز اور قانونی قرار دے دیا گیا ہے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،اسرائیل کو تسلیم کرنے کے بعد متحدہ عرب امارات کےخائن حکمران بھی آل سعود کی طرح شریعت محمدی کی پامالی میں مصروف ہوگئے ہیں اور 1 جنوری 2022 سے متحدہ عرب امارات میں شادی سے قبل جنسی تعلقات کو جائز اور قانونی قرار دے دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات نے ملک میں اصلاحات کے تحت 40 قوانین میں تبدیلیاں کی ہیں جن میں شادی سے پہلے جنسی تعلقات قائم کرنے کو بھی جرائم کی فہرست سے نکال کر اسے قانونی تحفظ فراہم کردیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات نے شادی سے قبل جنسی تعلق استوار کرنے، شراب نوشی، غیرت کے نام پر قتل جیسے قوانین میں نرمی کی ہے۔ مجموعی طور پر 40 قوانین میں نرمی کی گئی ہے جس کی تفصیلات بتدریج آ رہی ہیں۔ان قوانین کا اطلاق 1 جنوری 2022 سے ہوگا۔

متحدہ عرب امارات کے سرکاری میڈیا سے جاری بیان میں ہدایت کی گئی ہے کہ جوڑے باقاعدہ شادی سے قبل پیدا ہونے والی بچوں کو قانونی حیثیت دینے کے لیے فوری طور پر شادی کرلیں۔

بیان میں خبردار کیا گیا ہے کہ اگر والدین بچے کو تسلیم نہیں کرتے اور اس کی دیکھ بھال نہیں کرتے تو ان پر فوجداری مقدمہ چلایا جائے گا جس کی سزا دو سال قید ہوسکتی ہے۔

قبل ازیں متحدہ عرب امارات میں شادی سے قبل جنسی تعلق قائم رکھنے اور بچوں کی پیدائش قابل گرفت جرم تھا تاہم اب یہ صرف اس صورت میں جرم شمار کیا جائے گا جب شادی کے بغیر پیدا ہونے والے بچوں کو اپنے بچے کے طور پر نہ اپنایا جائے۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات کے قوانین میںیہ غیراسلامی تبدیلی اور خلاف شریعت تبدیلیاں سعودی ماڈرن ازم کا مقابلہ کرنے ، غیر ملکی عیاش سیاحوں کو سہولیات کی فراہمی اور زیادہ سے زیادہ زرمبادلہ کے حصول کیلئے ممکن بنائی جارہی ہیں۔

اماراتی حکمران فحاشی وعیاشی کو فروغ دیکر دنیا بھر کی توجہ حاصل کرنا چاہتےہیں تاکہ شوقین مزاج اور شراب وشباب کے رسیایورپ اور امریکا جانے کے بجائے دبئی اور ابوظہبی کارخ کریں اور زیادہ سے زیادہ سرمایہ حاصل کیا جائے۔

یہ خائن اور اسلام دشمن عرب حکمران چند ڈالروں یا ریالوں کے عیوض جس دیدادلیری سے قوانین اسلامی ، شریعت اسلامی اور احکام الہیٰ کو پیروں تلےروند رہے ہیں اس کا خمیازہ انہیں جلد بھگتاپڑے گا۔

یاد رہے کہ چند دنوں قبل ہی متحدہ عرب امارات میں اسرائیل کا پہلا سفیر تعینات ہوا ہےخدا جانےدین کے سوداگر یہ عرب شہزادے آگے کیا گل کھلاتے ہیں۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
4 + 6 =