۱۹ آذر ۱۴۰۱ |۱۶ جمادی‌الاول ۱۴۴۴ | Dec 10, 2022
مولانا افتخار حسین انصاری

حوزہ/ مولانا افتخار حسین انصاری ایک فرد کا نام نہیں تھا بلکہ ایک مکمل ادارے کا نام تھا، ان کا خواب تھا کہ شیعہ برادری کے لوگوں کو ان طاقتوں کے خلاف متحد رہیں جو مذہب کے نام پر لوگوں کو تقسیم کرتے ہیں۔

تحریر: سید کرار ہاشمی کشمیری مقیم قم المقدسہ

حوزہ نیوز ایجنسی | معروف اسلامی سکالر اور بلند پایہ سیاسی رہنما مولانا افتخار حسین انصاری کی 8ویں برسی کے موقع پر خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔آپ ایک بزرگ شخصیت تھے جنہیں کئی زبانوں بالخصوص کشمیری، انگریزی، عربی، فارسی اور اردو پر عبور حاصل تھا۔ انہوں نے اپنی پوری زندگی علم و حکمت کے حصول میں گزاری۔ وہ ایک بااثر شخصیت تھے اور انہوں نے زندگی بھر ایک عالم اور رہنما کا کردار ادا کیا۔ اس نے اسلامی اسٹیبلشمنٹ کے دفاع میں کوئی کسر نہیں چھوڑی اور پوری دنیا میں خاص طور پر عراق، ایران، لبنان اور شام میں اس کا بڑا اثر و رسوخ تھا۔

مرحوم اتحاد، بھائی چارے اور امن کی علامت تھے۔ آپ ہمیشہ شیعہ سماج کے حق میں سب سے آگے رہے اور ایک اسلامی مبلغ، رہنما اور روحانی پیشوا کے طور پر اپنے پیچھے کافی خدمات چھوڑ گئے۔

مولانا افتخار حسین انصاری ایک فرد کا نام نہیں تھا بلکہ ایک مکمل ادارے کا نام تھا، ان کا خواب تھا کہ شیعہ برادری کے لوگوں کو ان طاقتوں کے خلاف متحد رہیں جو مذہب کے نام پر لوگوں کو تقسیم کرتے ہیں۔ خداوند کریم انہیں جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا کریں ۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
2 + 1 =