۱۰ بهمن ۱۴۰۱ |۸ رجب ۱۴۴۴ | Jan 30, 2023
مقصود ڈومکی

حوزہ / کابل کے مظلوم شیعہ ہزارہ شہداء کی یاد میں مدرسہ خاتم النبیین صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم جیکب آباد میں تقریب؛ شمعیں روشن کی گئیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، کابل کے مظلوم شیعہ ہزارہ شہداء کی یاد میں مدرسہ خاتم النبیین صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم جیکب آباد میں تقریب؛ شمعیں روشن کی گئیں۔ اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما علامہ مقصود علی ڈومکی نے شہدائے کابل کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا: افغانستان شیعیان علی علیہ السّلام کی مقتل گاہ بن چکا ہے۔

انہوں نے کہا: طالبان حکومت اہل تشیع کے تحفظ میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے۔ جس کے سبب لوگ یہ کہنے پر مجبور ہو گئے ہیں کہ اس قتل عام کی تمام تر ذمہ داری طالبان پر عائد ہوتی  ہے۔

ایم ڈبلیو ایم بلوچستان کے مرکزی رہنما نے کہا: تعلیمی اداروں پر حملہ کرنے والے علم اور انسانیت کے دشمن معصوم بچوں اور خواتین پر حملہ کر کے یزید اور شمر کے مظالم کی یاد تازہ کر رہے ہیں۔ البتہ حضرت حسین ابن علی علیہما السلام کے پیروکار آج بھی بے مثال قربانیاں دے کر حسینیت کی راہ کو زندہ رکھے ہوئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا: ہزارہ قوم کو اہل بیت علیہم السلام سے عشق و محبت کے جرم میں ہر دور کے یزیدیوں نے ظلم و بربریت کا نشانہ بنایا ہے۔

علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا: ہم کابل کے مظلوموں کے ساتھ ہیں اور ان کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ اقوام متحدہ اور عالمی ادارے کابل افغانستان میں جاری شیعہ ہزارہ نسل کشی کا نوٹس لیں۔

انہوں نے طالبان حکومت سے اس قتل عام کو روکنے کا مطالبہ بھی کیا۔ اس موقع پر شہدائے کابل افغانستان کے لئے دعائے مغفرت کی گئی۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
6 + 0 =