۲ آبان ۱۳۹۹ | Oct 23, 2020
علامہ مقصود ڈومکی

حوزہ/ ایم ڈبلیو ایم رہنماء نے کہا کہ دشمن مرجعیت اور نظام ولایت سے خوفزدہ ہے، مدارس دینیہ اور علمائے کرام کی ذمہ داری ہے کہ وہ نظام ولایت کے مبلغ بن کر منجی عالم بشریت کے عالمی انقلاب کی زمینہ سازی کریں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جامعہ مدارس امامیہ کے زیر اہتمام مکتبہ محمدیہ گمبٹ میں عظمت ولایت فقیہ و مرجعیت سیمینار منعقد ہوا۔ سندھ کے شہر گمبٹ میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ عصر حاضر میں دنیائے کفر اور استکبار کے مقابلے میں مدارس دینیہ اور علماٸے اسلام کا کردار کلیدی حیثیت رکھتا ہے، انقلاب اسلامی ایران ایک مرجع تقلید اور ولی فقیہ کی سربراہی میں کامیابی سے ہمکنار ہوا اور گذشتہ 41 سال سے شیاطین عالم کی دشمنی کے باوجود ترقی کی منازل طے کر رہا ہے، آج عالمی استکباری قوتوں کے مقابلے میں جو شخص جرات اور حکمت کے ساتھ میدان عمل میں ہے وہ ولی فقیہ ہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ دشمن مرجعیت اور نظام ولایت سے خوفزدہ ہے، مدارس دینیہ اور علمائے کرام کی ذمہ داری ہے کہ وہ نظام ولایت کے مبلغ بن کر منجی عالم بشریت کے عالمی انقلاب کی زمینہ سازی کریں، عصر حاضر میں علامہ ابراہیم زکزاکی، سید مقاومت آقا حسن نصراللہ، علامہ سید عارف حسین الحسینی جیسی شخصیات نے نظام ولایت کو اپنے ممالک میں متعارف کرایا، آج نظام مرجعیت اور ولایت فقیہ کے باعث عراق شیطان بزرگ کے سامراجی قبضے سے آزاد ہو رہا ہے۔

سیمینار سے جامعہ مدارس امامیہ کے صدر علامہ علی بخش سجادی، علامہ مشتاق حسین مشہدی و دیگر نے خطاب کیا۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
4 + 14 =