۹ آذر ۱۳۹۹ | Nov 29, 2020
علامہ مقصود ڈومکی

حوزہ/ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ ہم جیلوں سے نہیں ڈرتے، سلام ان عزاداروں پر جو سید سجاد (ع) کی سنت ادا کرنے کے لئے تیار ہیں، اگر دین خدا کو ضرورت ہے تو عصر حاضر کے حسینی اور کربلائی حاضر ہیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، چہلم شہدائے کربلا کے موقع پر ہزاروں عزاداروں کے خلاف جھوٹے مقدمات کے خلاف خیرپور ضلع کے 11مقامات پر اجتماعی گرفتاریوں کے لئے ہزاروں مومنین سڑکوں پر نکل آئے۔ اس موقع پر کنب میں مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ ہم جیلوں سے نہیں ڈرتے، سلام ان عزاداروں پر جو سید سجاد (ع) کی سنت ادا کرنے کے لئے تیار ہیں، اگر دین خدا کو ضرورت ہے تو عصر حاضر کے حسینی اور کربلائی حاضر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پرامن عزاداروں پر ایف آئی آرز کا اندراج ملت جعفریہ کی مذہبی آزادی پر حملہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بابا گرونانک اور ہولی کی تقریب میں تعاون کرنے والے حکمران نواسہ رسول ص کے غم میں رکاوٹيں ڈال رہے ہیں، سندھ اور پنجاب میں سینکڑوں مقدمات کا اندراج ملت جعفریہ کو دیوار سے لگانے کی سازش ہے۔

اس موقع پر احتجاجی جلسے سے ایم ڈبلیو ایم سندھ کے رہنما علامہ محمد نقی حیدری، ضلعی سیکریٹری جنرل ایم ڈبلیو ایم خیرپور علامہ صفدر علی ملاح، رئیس نثار علی چانڈیو، رابطہ کونسل کے صدر سید جعفر شاہ نے خطاب کیا۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
1 + 2 =