۹ مهر ۱۴۰۱ |۵ ربیع‌الاول ۱۴۴۴ | Oct 1, 2022
علامہ علی رضا رضوی

حوزہ/ اسلام کو دنیا کی نگاہ میں بوسیدہ ، تنگ نظر اور قدامت پسند مذہب کی صورت میں پیش نہ کریں خداوندِ متعال نے دین اسلام کو اس انداز سے سجایا ہے کہ انسانیت سے وابسطہ ہر پریشانی اور مسئلے کا حل اسلام پیش کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،کراچی/ شہدائے کربلا ٹرسٹ اور خیرالعمل ورکنگ کمیٹی کے منعقدہ عشرہ محرم الحرام کی پانچویں مجلس عزا سے علامہ سید علی رضا رضوی نے اپنے موضوع دین حکمت پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دین کی آمد کا مقصد انسان کو طرح کے عیب سے صاف کرنا ہے اور اسکی سوچ ، فکر ، کردار کو جہالت ، جمود ، قدامت پسندی جیسے مضر امراض سے محفوظ رکھنا ہے تاکہ معاشرے میں بابنیاد اور معیاری اقدار قائم کیے جاسکیں ، دین اسلام وہ واحد مذہب ہے جس نے انسان کو ہر وہ آزادی فراہم کی ہے جو معاشرہ سازی اور انسان سازی کی راہ میں مفید اور مددگار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج اس جدید دور میں علماء و مشائخ کی ذمہ داری ہے کہ اسلام کو اس انداز میں پیش کیا جائے کہ آج کی تاریخ کا انسان جب اسلام کو دیکھے تو اسے اپنے ہر مسئلے کا حل اسلام اور اسلامی تعلیمات میں دیکھائی دے اسلام کے پیروکاروں اور نمائندوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اسلام کو دنیا کی نگاہ میں بوسیدہ ، تنگ نظر اور قدامت پسند مذہب کی صورت میں پیش نہ کریں خداوندِ متعال نے دین اسلام کو اس انداز سے سجایا ہے کہ انسانیت سے وابسطہ ہر پریشانی اور مسئلے کا حل اسلام پیش کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ساتھ ساتھ ان تمام آلودگیوں کو برطرف کرنے کی قوت بھی رکھتا ہے جو انسانیت کے لیے نقصان رساں ہیں۔

علامہ علی رضا رضوی نے مزید کہا کہ عقل کا جائز اور صحیح استعمال انسان کو عدل و عدالت کا خوگر بناتا ہے جبکہ غلط استعمال انسان کو شاطر و عیار بنادیتا ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
1 + 2 =