۲۴ تیر ۱۴۰۳ |۷ محرم ۱۴۴۶ | Jul 14, 2024
اعجاز ہاشمی

حوزہ/ جمعیتِ علمائے پاکستان کے صدر نے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیماری کی وجہ سے اسلاف اہل سنت کی نشانی جے یو پی کی سربراہی کے ساتھ انصاف کرنے سے قاصر ہوں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جمعیت علمائے پاکستان کے مرکزی صدر پیر اعجاز احمد ہاشمی نے پارٹی صدارت چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا۔ پیر اعجاز ہاشمی نے واضح کیا ہے کہ وہ اپنی بیماری کی وجہ سے اسلاف اہل سنت کی نشانی جے یو پی کی سربراہی کے ساتھ انصاف کرنے سے قاصر ہیں، اس لیے وہ ریٹائرمنٹ لینا چاہتے ہیں، مرکز ی صدارت کو مزید جاری نہیں رکھنا چاہتے۔

انہوں نے کہا کہ میں پہلے بھی پارٹی صدارت سے ٍمستعفی ہوا تھا، لیکن جے یو پی رہنماؤں کے اصرار پر استعفیٰ واپس لے لیا تھا، تاہم اپنی بیماری کی وجہ میں چاہتا ہوں کہ منصب صدارت پر کوئی اور متحرک شخصیت مولانا شاہ احمد نورانی کی نشانی جمعیت علمائے پاکستان کی قیادت سنبھالے۔

انہوں نے کہا ہے کہ مشاورتی عمل جاری ہے، ایک دو دنوں میں پارٹی انتخابات کے شیڈول کا اعلان کر دیا جائے گا۔

واضح رہے کہ قائد اہل سنت مولانا شاہ احمد نورانی کے قریبی ساتھی پیر اعجاز ہاشمی 2016 میں پہلی بار مرکزی صدر بنے اور وہ تین بار صدارت کا منصب سنبھال چکے ہیں۔ وہ کچھ عرصہ سے علیل ہیں، جبکہ ان دنوں پیر اعجاز ہاشمی اپنی یادداشتوں پر مشتمل کتاب پر بھی کام کررہے ہیں۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .