۳۰ دی ۱۴۰۰ |۱۶ جمادی‌الثانی ۱۴۴۳ | Jan 20, 2022
علامہ مرید حسین نقوی

حوزہ/ وفاق المدارس الشیعہ پاکستان کے نائب صدر نے کہا کہ اسرائیل کوتسلیم کرنے والے عرب ممالک کااپنی غلطی کے اعتراف اور فیصلہ واپس لینے کی بجائے محض مذمتی بیان شرمناک ہے۔ اوآئی سی کا ہنگامی اجلاس طلب کر کے اسلامی غیرت کے مطابق اقدامات کا اعلان کیا جائے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،لاہور/ وفاق المدارس الشیعہ پاکستان کے نائب صدر مولانامرید حسین نقوی نے مسجد اقصیٰ پر اسرائیل کی فائرنگ امت مسلمہ کی غیرت و حمیت کو چیلنج قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل کوتسلیم کرنے والے عرب ممالک کااپنی غلطی کے اعتراف اور فیصلہ واپس لینے کی بجائے محض مذمتی بیان شرمناک ہے۔ اوآئی سی کا ہنگامی اجلاس طلب کر کے اسلامی غیرت کے مطابق اقدامات کا اعلان کیا جائے۔

مولانا مرید نقوی نے کابل میں داعش کے ہاتھوں معصوم طالبات کے سفاکانہ قتل کو انسانی المیہ قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ تکفیری دہشت گرد گروہ کے سد باب کے لئے عالمی سطح پر اقدامات ناگزیر ہیں۔پاکستان کے اندر اور ہمسایہ ملک افغانستان میں اس دہشت گرد تنظیم کا وجود ہماری قومی سلامتی کے لئے سنگین خطرہ ہے جس پر حکومت اور متعلقہ اداروں کو موثر اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

وفاق المدارس الشیعہ کے نائب صدر نے یومِ شہادت حضرت علی علیہ السلام اور یوم القدس کے روایتی ،دیرینہ پر امن جلوسوں پر پولیس کی جانبداری اور مقدمات کے اندراج کو قابلِ مذمت قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ اس طرح کے منفی، متعصبانہ حربے حکومتوں کی ناکامی اور زوال کا باعث بنتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ محرم الحرام ،چہلم امام حسین ?، 21 رمضان کو اہل بیت رسول کے غم کے ایام منانے پرایسے ظالمانہ اقدامات فوجی آمریت کے دور میں بھی نہ ہوئے تھے جو ریاستِ مدینہ کے دعوے کرنے والے کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ یوم القدس بین الاقوامی سطح پر منایا جاتا ہے۔ غیر مسلم ممالک میں بھی جلوس اور ریلیاں نکالی جاتی ہیں۔حکومت فی الفور اس طرح کے مقدمات واپس لے کر آئین میں دی گئی مذہبی آزادیوں کو یقینی بنائے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
5 + 7 =