۱۳ اسفند ۱۴۰۲ |۲۲ شعبان ۱۴۴۵ | Mar 3, 2024
بندرعباس

حوزہ / ایران کے شہر سیریک کے اہل سنت امام جمعہ نے کہا: ولایت فقیہ عظیم میراث ہے جس کا دفاع اور حمایت ضروری ہے تاکہ ہم اپنے اسلامی اہداف کو حاصل کرسکیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، شہر سیریک کے اہلسنت امام جمعہ شیخ علی ماہیگیر نے ولایت فقیہ اور ایران کی حمایت میں بندر عباس میں شیعہ سنی طلبہ اور علماء کے اجتماع میں ایران میں حالیہ بلوائیوں کے حملوں اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کے واقعات کی مذمت کرتے ہوئے کہا: حضرت احمد موسی شاہچراغ (ع) کے حرم میں دہشت گردی کے المناک واقعہ نے ہر ایرانی کے دل کو رنجیدہ کردیا ہے جس پر میں ولی امر اور ملت ایران کی خدمت میں تعزیت عرض کرتا ہوں۔

انہوں نے مزید کہا: دشمن کے پروپیگنڈے کے برخلاف ہمارے ملک کے اہلسنت گزشتہ چار دہائیوں سے مقاومتی (مزاحمتی) محاذ کا ناقابل انکار حصہ ہیں۔

شہر سیریک کے اہل سنت امام جمعہ نے کہا: اہل سنت نے انقلاب اسلامی کے آغاز سے لے کر اب تک مسلط کردہ جنگ سمیت ملکی تمام بحرانوں میں اپنا مؤثر کردار ادا کیا ہے اور یہ چیز جماعت اہلسنت کے لیے افتخار کا باعث ہے۔

شیخ علی ماہیگیر نے کہا: میں ولی امر اور پائیدار ایران کی حمایت کو اپنی عقلی اور شرعی ذمہ داری سمجھتا ہوں اور امام راحل بانیٔ انقلاب اسلامی کے بیانات سے الہام لیتے ہوئے ولایت فقیہ کی حمایت کو ولایت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی حمایت قرار دیتا ہوں۔

انہوں نے کہا: ولایت فقیہ وہ عظیم میراث ہے کہ جس کا دفاع اور حمایت ضروری ہے تاکہ ہم اسلامی اہداف کو حاصل کرسکیں۔

اہل سنت کے اس امام جمعہ نے کہا: دشمن مضبوط اور طاقتور ایران سے خائف ہے۔

انہوں نے کہا: اسلامی سرزمین قدرتی وسائل سے مالا مال ہے۔ دشمن مسلمانوں کے درمیان اختلافات ایجاد کر کے ان وسائل کو اپنے کنٹرول میں لینا چاہتا ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .