۱۰ بهمن ۱۴۰۱ |۸ رجب ۱۴۴۴ | Jan 30, 2023
علامہ احمد اقبال رضوی

حوزہ/ اپنے بیان میں ایم ڈبلیو ایم رہنما نے کہا ہے کہ تعجب ہے ان مسلمان صحافیوں اور دانشوروں پر جو ایران میں پردہ کے خلاف استعماری تحریک کی حمایت میں بیان دے رہے ہیں کہ اس وقت ایران میں پردہ نہ کرنا مزاحمت کی علامت ہے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے وائس چیئرمین علامہ سید احمد اقبال رضوی نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا ہے کہ ایران میں اسلامی نظام عملی طور پر نافذ ہے اور وہاں موجود قوانین قرآن اور سنت سے اخذ شدہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حجاب قرآن و سنت میں عورت پر فرض کیا گیا ہے اسی لئے یہ ایران کے قانون کا حصہ ہے، اس لحاظ سے حجاب حق اللہ ہے جسے ختم کرنا انسان کے اختیار میں نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ تعجب ہے ان مسلمان صحافیوں اور دانشوروں پر جو ایران میں پردہ کے خلاف استعماری تحریک کی حمایت میں بیان دے رہے ہیں کہ اس وقت ایران میں پردہ نہ کرنا مزاحمت کی علامت ہے، یہ ایران کے نظام سے نہیں اللہ، رسول صلی علیہ و آلہ وسلم اور قرآن سے جنگ ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
3 + 3 =