۲۴ خرداد ۱۴۰۳ |۶ ذیحجهٔ ۱۴۴۵ | Jun 13, 2024
وحدت امت ریلی

حوزہ/ لاہور پاکستان حماس کے آپریشن طوفان الاقصیٰ کی حمایت میں نکالی گئی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ جواد نقوی نے کہا کہ حماس کی قابل فخر مقاومت کے بعد مسلمان ممالک کی مصلحت پسندی اور منافقت کا دور ختم ہو چکا۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، حماس کی قابل فخر مقاومت پر خراج تحسین پیش کرنے اور مظلومین فلسطین سے اظہار یکجہتی کے لئے تحریک بیداری امت مصطفیٰ پاکستان کے زیراہتمام ’’یکجہتی فلسطین ریلی‘‘ نکالی گئی جس كی قیادت علامہ سید جواد نقوی نے كی، ریلی میں مرد و خواتین سمیت بچوں کی کثیر تعداد شریک ہوئی۔

تحریک بیداری اُمت مصطفیٰ کے سربراہ علامہ سید جواد نقوی کا یکجہتی فلسطین مارچ سے خطاب میں کہنا تھا کہ طاقتور سامراجی طاقتیں، مادی و عسکری وسائل اور ذرائع ابلاغ کی وسیع تبلیغات کے باوجود حماس کی اس عظیم مزاحمت کے مقابلے میں مغلوب ہوکر رہ گئی ہیں۔ انکا کہنا تھا کہ حماس کی قابل فخر مقاومت نے ان طاقتوں کے منہ پر زور دار تمانچہ رسید کیا ہے اور اس اقدام کی وجہ سے مسلمان ممالک کی مصلحت پسندی اور منافقت کا دور بھی ختم ہو چکا لیکن مسلمان حکمرانوں کی بے حسی اور بیغیرتی کا دور جاری ہے جو معصوم بچوں اور جوانوں کی خون میں اٹی لاشوں، ماؤں بہنوں کی نالہ و فریاد کے مناظر اور بدترین و غیر انسانی ناکہ بندی پر بھی خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ امت اسلامیہ خیانت کار حکمرانوں کی منتظر نہ رہے اور فلسطین اور تمام اسلامی سرزمینوں کی آزادی کے لیے اپنا الگ راستہ اپنائے، وہ راستہ جو امام خمینی رح کا تجویز کردہ ہے جنہوں نے یوم القدس کی صورت میں مسئلہ فلسطین حکومتوں سے لے کر امتوں کے سپرد کر دیا اور یہ مسلمانوں کی آواز کو ایک لڑی میں پرونے کا ذریعہ بن گیا۔

اُنہوں نے کہا کہ غاصب صہیونی حکومت کیساتھ عرب حکومتوں کے روابط کی بحالی اسی اسلامی بیداری کی روشن حقیقت سے فرار کی ناکام کوشش ہے جو کارگر نہیں ہوں گی اور ان لوگوں کے ہاتھ صرف ذلت اور بدنامی لگے گی جنہوں نے مسلمان سرزمینوں کے تمام وسائل اس استکباری سیاست کیلئے وقف کر رکھے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت عالم اسلام کے پاس اپنی قوموں کے مفادات کے تحفظ کیلئے واحد راستہ اسلام کے محور پر اتحاد قائم کرنا اور دشمنوں اور مستکبرین کے سامراجی اہداف کا انکار ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ غاصب صہیونی حکومت نے اپنے اہداف طفل کشی، قتل و غارت، آہنی مکے اور تشدد کی مدد سے حاصل کرنے کی کوشش کی ہے. ایسی ریاست جو کسی کی سوچ اور تخیل سے بعید جرائم کا ارتکاب کرتی ہے، کے مقابلے کا واحد ذریعہ پر عزم اور مسلح مقابلہ ہے۔

واضح رہے كہ آج تحریکِ بیداریِ اُمتِ مصطفٰی نے لاہور، اسلام آباد، کراچی، کوئٹہ، پشاور اور گلگت سمیت ملک کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں یکجہتی فسلطین ریلیز كے انعقاد كا اعلان كر ركھا تھا۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .