۲۸ مرداد ۱۴۰۱ |۲۱ محرم ۱۴۴۴ | Aug 19, 2022
علامہ راجہ ناصر عباس جعفری

حوزہ/ اہل بیت اطہار علیہم السلام،ازواج رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور صحابہ کرام رضوان اللہ کے مزارات کا انہدام ایک بدترین عمل ہے جس نے امت مسلمہ کے دلوں کو رنجیدہ کیا ہے۔ جب تک مقامات مقدسہ کی ازسر نو تعمیر نہیں کی جاتی تب تک ہر سال اسی طرح سے آواز بلند ہوتی رہے گی۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،اسلام آباد/ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے 8 شوال کو یوم انہدام جنت البقیع کے موقع پر جاری اپنے بیان میں کہا ہے کہ اہل بیت اطہار علیہم السلام،ازواج رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور صحابہ کرام رضوان اللہ کے مزارات کا انہدام ایک بدترین عمل ہے جس نے امت مسلمہ کے دلوں کو رنجیدہ کیا ہے۔ جب تک مقامات مقدسہ کی ازسر نو تعمیر نہیں کی جاتی تب تک ہر سال اسی طرح سے آواز بلند ہوتی رہے گی۔

انہوں نے کہا کہ ایک صدی قبل سرزمین حجاز پر ظلم و بربریت کا جو سیاہ باب رقم کیا ہے یہ اس خیانت کاری کا تسلسل ہے جو چودہ سو سالوں سے خانوادہ رسول ص اور محبان اہلبیت ع کے ساتھ روا رکھا جا رہا ہے۔آل رسول کو شہید کرکے ان کے مزارات کو مسمار کرنا خارجیوں اور ناصبیوں کے  ہتھکنڈے رہے ہیں۔اسلام کی حقیقی نشانیوں سے نفرت کرنے والوں کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں۔

انہوں نے کہا کہ خلافت عثمانیہ کے ٹکڑے کرنے کے لیے اس وقت کی استعماری طاقت برطانیہ کا ساتھ دینے والوں کے عزائم کسی سے پوشیدہ نہیں۔ لیبیا کی تباہی اور یمن کے خلاف یہ جس خیانت کے مرتکب ہوئے اس پر عالم اسلام ان کو کبھی معاف نہیں کرے گا۔انہوں نے کہا کہ رسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے محبت ہم سے یہ تقاضہ کرتی ہے کہ مقامات مقدسہ کو شہید اور عالم اسلام سے  خیانت کرنے والوں  کے خلاف اپنی آواز بلند کرتے رہیں۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
8 + 10 =