۲۰ مرداد ۱۴۰۱ |۱۳ محرم ۱۴۴۴ | Aug 11, 2022
پاکستان میں ایرانی سفیر

حوزہ/ پاکستان میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ پاکستان سمیت پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کو مضبوط بنانا ایرانی نظام کی پالیسی کی ترجیح ہے اور نئی ایرانی حکومت بھی اس پالیسی کو جاری رکھے گی۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،اسلام آباد/ پاکستان میں اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ پاکستان سمیت پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کو مضبوط بنانا ایرانی نظام کی پالیسی کی ترجیح ہے اور نئی ایرانی حکومت بھی اس پالیسی کو جاری رکھے گی۔

یہ بات "سید محمد علی حسینی" نے اسلام آباد میں سینئر صحافیوں اور پاکستان کے میڈیا گروپ کے عہدیداروں کے ساتھ ایک اجلاس میں کہی۔انہوں نے پاکستان کے ساتھ دو طرفہ تعلقات ، افغانستان کی تبدیلیوں ، جوہری معاہدے ، مشرقی اور مغربی ممالک کے ساتھ تعلقات کے بارے میں اسلامی جمہوریہ ایران کی پالیسیوں کی وضاحت کی۔

پاکستانی صحافیوں نے بھی مستقبل میں اپنے ہمسایہ ممالک بشمول پاکستان کے ساتھ باہمی تعلقات خاص طور پر توانائی تعلقات کو بڑھانا ، مغربی اور مشرقی ممالک کے ساتھ باہمی تعلقات کے بارے میں بھی سوالات پوچھے۔

 ایرانی سفیر نے کہا کہ ممالک کے ساتھ ہماری خارجہ پالیسی حکومتوں کے آنے اور جانے سے نہیں بدلے گی کیونکہ اسلامی جمہوریہ ایران کے آئین میں نہ مغربی ممالک اہم ہیں نہ مشرقی ممالک، کیونکہ ایران کسی تسلط کو قبول نہیں کرتا ہے اس کے علاوہ کسی ملک پر تسلط کرنے کا ارادہ نہیں رکھتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایران نے ناجائز صہیونی حکومت اور امریکہ کے بغیر دنیا کے مختلف ممالک کے ساتھ خارجہ تعلقات کے فروغ میں دریغ نہیں کیا اور کسی بھی ملک کو اپنے تعلقات  کے دائرے سے خارج نہیں کیا ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
8 + 5 =