۵ بهمن ۱۴۰۰ |۲۱ جمادی‌الثانی ۱۴۴۳ | Jan 25, 2022
علامہ سبطین سبزواری

حوزہ/ اسلامی تحریک پاکستان کے مرکزی نائب صدر کا کہنا تھا کہ پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کو شروع کیا جائے تاکہ ملک ناقابل برداشت گیس بحران سے نجات حاصل کرسکے ۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،لاہور/ اسلامی تحریک پاکستان کے مرکزی نائب صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے ملک میں جاری گیس بحران پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے عوام اب کھانا پکانے کی سہولت سے بھی محروم ہوگئے ہیں۔مہنگائی، بیروز گاری کے ساتھ حالات اسی طرح جاری رہے تو بہت جلد حکمران عوام کے ہاتھوںمیں حکمرانوں کے گریبان ہوں گے۔ عوام کی صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کو شروع کیا جائے تاکہ ملک ناقابل برداشت گیس بحران سے نجات حاصل کرسکے ۔

علامہ سبطین سبزواری نے یا د دلایا کہ ایران اپنے حصے کے پائپ لائن بھی بچھا چکا ہے اور پاکستان کو اپنی سرزمین پر لائن بچھانے کے لئے قرض دینے پربھی تیار ہے مگر حکمرانوں کی نااہلی اور امریکہ کا خوف قومی ترقی کے راستے میں رکاوٹ ہے۔

آئی ٹی پی کے رہنما نے افسوس کا اظہار کیا کہ پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں شروع کئے گئے گیس پائپ لائن منصوبے کے افتتاح کے باوجود بعد میں برسر اقتدار آنے والی مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کی حکومتوں نے امریکہ سے خوفزدہ ہوکرقومی اہمیت کے منصوبے پر کوئی کام نہیں کیا اور مہنگی ایل این جی خریدی ،جس کا آج نہ صرف ملک و قوم کو نقصان ہوا بلکہ عوام بھی در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں گیس کے ذخیرے ختم ہو چکے ہیں اور ملک کی ضرورت کو پورا کرنے کے قابل نہیں رہے۔اس لئے اس وقت کی حکومت نے ایران سے گیس لے کر اپنے ملک کی ضروریات کو پورا کرنے کی کوشش کی مگر امریکہ کے خوف کی وجہ سے آنے والی حکومتیں ایسا نہ کر سکیں۔اور نتائج آج قوم بھگت رہی ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
6 + 3 =