۱۰ مهر ۱۴۰۱ |۶ ربیع‌الاول ۱۴۴۴ | Oct 2, 2022
علامہ شبیر میثمی

حوزہ/ شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل: قائد ملت جعفریہ پاکستان کی ہدایت پر اربعین حسینی پر بائی روڈ سفر کرنے والے پاکستانی زائرین کے مسائل کے حل کے لئے پاکستانی و عراقی دفاتر خارجہ امور و مراجع تقلید کے کے دفاتر سے رابطے میں ہیں امید ہے مسائل حل ہونگے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،شیعہ علماء کونسل پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ شبیر حسن میثمی نے کہا ہے کہ چند روز سے یہ مسئلہ سامنے آیا ہے کہ پاکستان سے بائی روڈ جانے والے زائرین امام حسینؑ پر پابندی لگائی گئی ہے، پابندی کو سمجھنا ضروری ہے، وہ یہ کہ میری عراق میں پاکستان کے سفیر سے گفتگو رہی ہے۔

انہوں نے بتایا ہے کہ ایران سے عراق بارڈر پر صرف ایرانی جاسکیں گے اور کوئی نہیں جاسکے گا۔ علامہ شبیر میثمی کے مطابق ہمارے پاکستانی زائرین تو بائی ایئر زیادہ سے زیادہ دس بارہ ہزار جاتے ہونگے، سمندری راستے کا تو کوئی سلسلہ نہیں، لیکن جو بائی روڈ جانے والے ہیں، ان پر عراقی حکومت نے پابندی لگائی ہے اور عراقی کابینہ نے اسے پاس کیا ہے، یہ ہمارے پاکستانی ایمبسی کے افراد نے بتایا ہے۔

علامہ شبیر میثمی نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر ڈالی گئی ویڈیو میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے وزارت خارجہ پاکستان، وزارت خارجہ عراق، مراجع عظام کے دفاتر اور پاکستان کے عراق میں سفیر سے محکم رابطے شروع کر دیئے ہیں، اس معاملے میں میٹنگز شروع ہوچکی ہیں، امید ہے ان شاء اللہ ہم حکومت پاکستان سے جو گفتگو آگے بڑھا رہے ہیں اور مراجع تقلید کے دفاتر سے قائد ملت جعفریہ پاکستان کے حکم پر رابطوں کو انجام دے رہے ہیں کہ عراقی حکومت پر پریشر ڈال کر کم از کم اربعین کے موقع پر یہ مسائل حل ہوں، دعا کریں کہ قائد ملت جعفریہ پاکستان کی کوشش نتیجہ دے اور ان شاء اللہ ہم اربعین امام حسینؑ سے قبل اس مسئلے کو حل کرلیں۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
4 + 2 =