۱۰ مهر ۱۴۰۱ |۶ ربیع‌الاول ۱۴۴۴ | Oct 2, 2022
غزہ میں “ہفتہ دفاع القدس اور الاقصیٰ ” کا آج سے آغاز

حوزہ/ فلسطینی قانون ساز کونسل میں "القدس اور الاقصیٰ " کمیٹی نے آج جمعہ سے اگلے جمعرات تک کل "سپورٹ یروشلم اور الاقصیٰ " کی سرگرمیوں کے آغاز کا اعلان کیا ہے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،فلسطینی قانون ساز کونسل میں “القدس اور الاقصیٰ ” کمیٹی نے آج جمعہ سے اگلے جمعرات تک کل “سپورٹ یروشلم اور الاقصیٰ ” کی سرگرمیوں کے آغاز کا اعلان کیا ہے۔

یہ بات کمیٹی اور بیت المقدس کے لیے کام کرنے والے اداروں کے ذریعہ جمعرات کو غزہ شہر میں قانون ساز کونسل کے صدر دفاتر میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس کے دوران سامنے آئی جس میں مسجد اقصیٰ میں آتش زدگی کی 53 ویں برسی کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔

یروشلم اور الاقصیٰ کمیٹی کے سربراہ رکن پارلیمنٹ احمد ابو حلابیہ نے کہا کہ اس قابض ریاست میں القدس شہر کو یہودیانے کی کوشش کی گئی ہے اور مسجد اقصیٰ کو یہودیوں کا معبد بنانے کی سازش کی جا رہی ہے۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ اسرائیل مسجد اقصیٰ کی زمانی اور مکانی تقسیم مسلط کرنے کی قبلہ اول کے احاطے میں یہودیوں کے داخلے کی سہولت فراہم کررہا ہے۔

21 اگست 1969 کو بابرکت مسجد الاقصیٰ کو انتہا پسند یہودی ڈینس مائیکل نے آگ لگا دی تھی جس کے نتیجے میں مسجد کے مشرقی حصےمیں ایک بڑی آگ بھڑک اٹھی اور منبر صلاح الدین ایوبی سمیت کئی مقامات جل کر خاکستر ہوگئے تھے۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو 15 ستمبر 1969 کو جاری ایک بیان میں اس آتش زدگی کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
1 + 8 =