۱ اردیبهشت ۱۴۰۳ |۱۱ شوال ۱۴۴۵ | Apr 20, 2024
پاراچنار میں شیعہ نسل کشی کے خلاف آئی ایس او کراچی کے احتجاجی مظاہرے؛

حوزہ/ مقررین کا کہنا تھا کہ ملک دشمن قوتیں ایک بار پھر پاکستان کو فرقہ واریت میں الجھانا چاہتی ہیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، کراچی/ امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کراچی ڈویژن کی جانب سے پاراچنار میں مسافروں کو نشانہ بنانے والی بزدلانہ کاروائیوں، فرقہ وارانہ تشدد اور حکومتی نااہلی کی مذمت کے لئے آج بروز جمعہ 12 جنوری شہر بھر میں 20 سے زائد جامع مسجد کے باہر احتجاجی مظاہرے منعقد کئے گئے۔

احتجاجات سے خطاب کرتے ہوئے آئی ایس او رہنماؤں کا کہنا تھا کہ پاراچنار میں آئے روز کوئی انسانیت سوز واقعہ رونماء ہوتا ہے جس میں دشمن ہمیشہ تعاقب کرکے شیعہ شناخت پر نہتے جوانوں، بزرگوں اور خواتین تک کو نشانہ بناتا ہے مگر افسوس قانون نافذ کرنے والے ادارے ان واقعات میں ملوث دہشتگرد عناصر کے آگے بے بس تماشائی دکھائی دیتے ہیں۔

فرقہ وارانہ دہشتگردی کے ذریعہ دشمن ہماری توجہ فلسطین سے ہٹانا چاہتا ہے، آئی ایس او

رہنماؤں نے مزید کہا کہ امامیہ طلباء کا خطے میں بڑھتی ہوئی اسپانسرڈ دہشتگردی کیخلاف موقف برقرار ہے اور شہر بھر میں منعقدہ ان احتجاجات کا مقصد سیکیورٹی کے بہتر اقدامات کی فوری ضرورت اور پر امن شہریوں پر بارہا حملوں سے حفاظت کیلئے شعور اجاگر کرنا ہے۔

فرقہ وارانہ دہشتگردی کے ذریعہ دشمن ہماری توجہ فلسطین سے ہٹانا چاہتا ہے، آئی ایس او

رہنماؤں نے مزید کہا کہ پاراچنار میں حملوں کا سلسلہ فرقہ وارانہ نفرت کے ایک پریشان کن رجحان کی نشاندہی کر رہا ہے، ان فرقہ وارانہ دہشتگردی کے واقعات کے ذریعہ دشمن ہماری نگاہیں مسئلہ فلسطین سے ہٹانا چاہتا ہے، ہم مسئلہ فلسطین پر اپنے بنیادی نظریہ پر قائم ہیں اور مملکت کے موجودہ حکمرانوں کی دو ریاستی نظریہ کی پیشی کو رد کرتے ہیں۔

فرقہ وارانہ دہشتگردی کے ذریعہ دشمن ہماری توجہ فلسطین سے ہٹانا چاہتا ہے، آئی ایس او

مقررین نے مزید کہا کہ امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن اس طرح کی پرتشدد کاروائیوں کی بھرپور مذمت کرتی ہے اور تمام شہریوں کی حفاظت اور سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے فوری اور موثر اقدامات کا مطالبہ کرتی ہے۔

تبصرہ ارسال

You are replying to: .