۱ اردیبهشت ۱۴۰۳ |۱۱ شوال ۱۴۴۵ | Apr 20, 2024
2

حوزہ/ غزہ جنگ میں اسرائیل کی امریکہ کی اندھی اور وسیع حمایت اور خطے میں حالیہ تبدیلیاں اس بات کا ثبوت ہیں کہ نہ امریکہ اور نہ ہی اس کے اتحادی بلکہ ایران مغربی ایشیا کی سب سے بڑی طاقت ہے۔

حوزہ نیوزایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، غزہ جنگ میں اسرائیل کی امریکہ کی اندھی اور وسیع حمایت اور خطے میں حالیہ تبدیلیاں اس بات کا ثبوت ہیں کہ نہ امریکہ اور نہ ہی اس کے اتحادی بلکہ ایران مغربی ایشیا کی سب سے بڑی طاقت ہے۔

مشرق وسطیٰ میں اب امریکہ، مصر، سعودی عرب یا اسرائیل سب سے بڑی طاقت نہیں بلکہ ایران مغربی ایشیا کی سب سے بڑی طاقت ہے، برطانیہ سے شائع ہونے والے اخبار گارڈین نے مغربی ایشیا میں رونما ہونے والی حالیہ تبدیلیوں اور یمن پر امریکی قیادت میں حملوں کے حوالے سے لکھا ہے کہ یمن پر امریکی قیادت میں حملہ مغربی ایشیا میں مغرب کی پالیسیوں کی ایک اور ناکامی ہے اور انصار اللہ پر امریکہ اور برطانیہ کا مشترکہ حملہ اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ امریکی سفارت کاری دن بدن کمزور ہوتی جا رہی ہے اور اس کی طاقت پر کوئی اثر نہیں ہو رہا ہے اور انصار اللہ امریکہ کی ہر قسم کی دھمکیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہے۔

برطانوی اخبار نے لکھا ہے کہ غزہ جنگ ایران کے مقام و مرتبہ کو مضبوط کرنے کا باعث بنی ہے اور اس کے برعکس امریکی صدر جو بائیڈن کی اسرائیل کی غیر مشروط حمایت اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں امریکہ کی طرف سے غزہ میں جنگ بندی کے معاہدے کو دو بار ویٹو کرنے کے بعد عالمی رائے عامہ امریکی رجحانات سے زیادہ آگاہ ہو گئی۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .