۱۳ آذر ۱۴۰۱ |۱۰ جمادی‌الاول ۱۴۴۴ | Dec 4, 2022
ممبئی،پیغمبر اسلام کے متنازع خاکوں کی اشاعت "فرانسیسی میگزین" کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

حوزہ/ مظاہرین کا کہنا تھا کہ پیغمبر اسلام کے خیالی خاکے (کارٹون) بنا کر ڈیڑھ عرب سے زائد مسلمانوں کی دل آزاری کی جا رہی ہے۔

حوزه نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،ممبئی: فرانسیسی میگزین چارلی ہیبڈو کی جانب سے پیغمبر اسلام کے متنازع خاکوں کی دوبارہ اشاعت کی وجہ سے دنیا بھر کے مسلمانوں میں سخت غم و غصہ پایا جا رہا ہے۔ ہندوستان کے شہر ممبئی میں بھی فرانسیسی میگزین کے خلاف زبردست مظاہرہ کیا گیا۔ واضح رہے کہ فرانسیسی جریدے نے وہی خاکے پھر سے شائع کیے ہیں جن کی بنا پر سنہ 2015 میں اس پر حملہ ہوا تھا۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ پیغمبر اسلام کے خیالی خاکے (کارٹون) بنا کر ڈیڑھ عرب سے زائد مسلمانوں کی دل آزاری کی جا رہی ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق مظاہرہ میں رضا اکیڈمی سمیت دیگر تنظیموں نے شرکت کی اور فرانسیسی میگزین کے خلاف نعرے بازی کی۔بھنڈی بازار جنکشن پر ہونے والے اس احتجاج کے دوران مظاہرین ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینرز تھامے ہوئے تھے اور ناموس رسالت زندہ باد، لبیک یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم اور فرانس مردہ باد کے نعرے بلند کر رہے تھے۔

اس موقع پر رضا اکیڈمی کے چیئر مین سعید نوری فرانسیسی حکومت سے چارلی ہیبڈو  کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ شرپسند عناصر، توہین رسالت کرنا جن کا شیوا بن چکا ہے اگر ان کے خلاف بروقت کارروائی نہ کی گئی تو آئے دن اس طرح کے گستاخ پیدا ہوتے رہیں گے اور دنیا میں ہم آہنگی اور امن و سکون کے لئے خطرہ ثابت ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ فرزندانِ توحید ہرگز خاموش نہیں بیٹھیں گے کیونکہ یہ ناموس رسالت کا سوال ہے، جو کہ ہمارے لئے سب سے قیمتی سرمایہ ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
2 + 4 =