۱۰ خرداد ۱۴۰۳ |۲۲ ذیقعدهٔ ۱۴۴۵ | May 30, 2024
قاسم سلیمانی۔ انجمن شرعی شیعیان کشمیر

حوزہ/ شہید شہید قاسم سلیمانی کی تیسری برسی کے موقع پر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سےمجلس ترحیم کا انعقاد کیا اور شہید کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، شہید قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی المہندس و دیگر شہدا کی تیسری برسی کے موقع پر جموں و کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے صدر دفتر میں ایصال ثواب کے لئےنمائندہ صدر انجمن شرعی شیعیان حجت الاسلام آغا سید مجتبیٰ عباس الموسوی الصفوی کی صدارت میں مجلس ترحیم منعقد ہوئی، مجلس ترحیم میں متعدد علمائے کرام کے ساتھ ساتھ تنظیم کے مرکزی ذاکرین اور اراکین و عاملین نے شرکت کی۔
اس موقعہ پر شہدا کے ایصال ثواب کے لئے اجتماعی قرآن خوانی و فاتحہ خوانی کی گئی، علمائے دین نے شہید قاسم سلیمانی اور ان کے دیگر ساتھی شہدا کے کارناموں اور کردار وعمل کے مختلف گوشوں کی وضاحت کی، مرکزی ذاکرین نے مرثیہ خوانی کی مقررین نے کہا کہ شہید قاسم سلیمانی نہ صرف ایک مایہ نازسپاہ سالار تھے بلکہ ایک اعلیٰ پایہ کے متقی، صاحب علم و عرفان زاہد و علم دوست انسان تھے جنہوں نے اسلامی انقلاب کے خلاف عالم استکبار کی تمام تر سازشوں اور منصوبہ بندیوں کو ناکام بنایا بلکہ شام اور عراق میں دنیا کے بدترین خون خوار دہشت گرد گروہ داعش کا خاتمہ کرکے کروڑوں انسانوں کو امن و چین سے جینے کا موقعہ فراہم کیا، مشرقی وسطیٰ میں امریکہ اور اسرائیل کے اثر و نفوزکو محدود و مسدود کرنے میں قاسم سلیمانی کا کردار کلیدی نویت کا حامل ہے، بیت المقدس کی آزادی اور ایک آزاد و خود مختار فلسطینی مملکت کا قیام شہید موصوف کی دلی آرزو تھی اور اس سلسلے میں شہید موصوف کئی محاذوں پر سرگرم عمل تھے، اسرائیل کے توسیع پسندانہ عزائیم کو توڑنے میں قاسم سلمیانی کا سب سے بڑا عمل دخل تھا اور صہیونی مملکت شہید موصوف کو سب سے بڑا خطرہ تصور کر رہی تھی یہی وجہ ہے کہ شہید موصوف کو راستے سے ہٹانے کے لئے امریکہ اور اسرائیل برسوں سے منصوبہ بندیاں کر رہے تھے بالآخر شہید موصوف کو ایک بزدلانہ امریکی دہشت گرد ی کا نشانہ بن کر درجہ شہادت پر فائز ہوئے شہید کی گرانقدر خدمات ۔انقلاب اسلامی اور رہبر معظم کے ساتھ عزیمانہ وفا داری کو ہمیشہ یاد کیا جائے گا۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .