۱۰ اسفند ۱۴۰۲ |۱۹ شعبان ۱۴۴۵ | Feb 29, 2024
عروۃ الوثقی لاہور

حوزه/ جامعہ عروۃ الوثقیٰ لاہور پاکستان میں ’’یزیدیت شکن اربعین حسینی‘‘ کا عظیم الشان اجتماع منعقد ہوا جس میں علماء و مشائخ سمیت ہزاروں شیعہ سنی نے شرکت کی۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، جامعہ عروۃ الوثقیٰ لاہور پاکستان میں ’’یزیدیت شکن اربعین حسینی‘‘ کا عظیم الشان اجتماع منعقد ہوا جس میں علماء و مشائخ سمیت ہزاروں شیعہ سنی نے شرکت کی۔

پاکستان میں جاری فرقہ واریت شیعہ اور سنی کی نہیں، بلکہ یہ حسینت اور یزیدیت کے درمیاں معرکہ ہے، علامہ سید جواد نقوی

علامہ جواد نقوی نے عزاداروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یزیدیت شکن اربعینِ حسینی علیہ السلام جہاں امام عالی مقام کے راستے کی پیروی کا وعدہ ہے وہیں یزیدیت اور اس کے پیروکاوں سے رزم کا بھی اعلان ہے، جو کربلا سے شروع ہوئی لیکن عزاداری کی شکل میں آج تک جاری ہے۔

رپورٹ کے مطابق، جامعہ عروۃ الوثقیٰ اور تحریک بیداری امت مصطفیٰ پاکستان کے زیر اہتمام اربعین حسینی علیہ السلام کا یہ عظیم الشان اجتماع جامعہ عروۃ الوثقی لاہور پاکستان میں ہوا، جس کا عنوان یزیدیت شکن اربعینِ حسینی ؑتھا۔

اس مرکزی اجتماع میں پاکستان بھر سے معروف نوحہ خواں، ماتمی دستے اور بلاتفریق مسلک و مذہب عاشقانِ امام حسین علیہ السلام کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

اس موقع پر علامہ سید جواد نقوی نے اپنے خطاب میں کہا کہ فرقہ واریت اور تجارت سے پاک عزاداری سے بعثت رسول اللہ (ص) کا ہدف حاصل ہو سکتا ہے اور امام حسینؑ کی سیرت سے درس لیکر ہر دور کے ظلم و استبداد کا مقابلہ کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کا کہ یزیدیت ہر دور میں ایک ناسزا اور گالی ہے اور جو بھی اس سے منسلک ہو گا وہ ذلیل و رسوا ہی ہوا۔

علامہ سید جواد نقوی نے کہا کہ یزیدیت شکن اربعینِ حسینی علیہ السلام جہاں امام عالی مقام کے راستے کی پیروی کا وعدہ ہے وہیں یزیدیت اور اس کے پیروکاوں سے رزم کا بھی اعلان ہے، جو کربلا سے شروع ہوئی، لیکن عزاداری کی شکل میں آج تک جاری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں فرقہ وارانہ عناصر کا راستہ روکنا قومی و شرعی تقاضا ہے۔ پاکستان میں جاری فرقہ واریت شیعہ اور سنی کی نہیں بلکہ یہ حسینت اور یزیدیت کے درمیاں معرکہ ہے اور حسینی لشکر میں شیعہ تنہا نہیں۔ چنانچہ وطنِ عزیز میں امن و امان کی بگڑتی صورتحال اور تفرقہ انگیز عوامل میں تشویشناک اضافے کے تدارک کیلئے مشاورت اور لائحہ عمل کا تعین کرنا ضروری ہے، تاکہ تمام مکاتبِ فکر ہم آواز اور ہمقدم ہو کر فرقہ واریت کے عفریت کیخلاف عوامی بیداری پیدا کریں اور اس زہرِ قاتل کے تریاق کی خاطر عملی اقدامات کریں۔

واضح رہے کہ اربعینِ حسینی علیہ السلام کا یہ عظیم الشان اجتماع شام سے لے کر رات گئے تک جاری رہا اور لاہور شہر کے علاوہ پورے پاکستان سے مؤمنین جوق در جوق مرکزِ ولایت جامعہ عروۃ الوثقیٰ میں اپنے امام سے تجدیدِ عہد کیلئے بڑی تعداد میں شریک ہوئے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .