۳۰ مهر ۱۴۰۰ |۱۵ ربیع‌الاول ۱۴۴۳ | Oct 22, 2021
کوئٹہ؛ ملی یکجہتی کونسل بلوچستان

حوزہ/ مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل غاصب اور جعلی ریاست ہے جسے دنیا کے غیرت مند مسلمان اور اقوام عالم تسلیم کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں۔ عرب حکمران اگر بیت المقدس اور قبلہ اول کا سودا کرتے ہوئے امت مسلمہ سے خیانت کے مرتکب ہو رہے ہیں تو یہ ان ممالک کے عوام کا فیصلہ نہیں ہے بلکہ غیر منتخب غیر جمہوری اور ناجائز حکمرانوں کا فیصلہ ہے جو اسرائیل اور امریکہ کے سامنے سجدہ ریز ہو چکے ہیں۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،ملی یکجہتی کونسل بلوچستان کے زیر اہتمام ملک گیر یوم احتجاج کے موقع پر کوئٹہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق، مظاہرے سے صوبائی صدر ملی یکجہتی کونسل بلوچستان مولانا عبد الحق ہاشمی مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے رہنما علامہ مقصود علی ڈومکی علامہ سید محمد ہاشم موسوی علامہ برکت علی مطہری جماعت اسلامی کے رہنما مولانا حافظ نور علی اور زاھد اختر بلوچ جامعہ امام صادق علیہ السلام کے پرنسپل بزرگ عالم دین علامہ محمد جمعہ اسدی جماعت اھل سنت بلوچستان کے صوبائی صدر پیر سید حبیب اللہ شاہ چشتی جمعیت اتحاد العلماء بلوچستان کے رہنما مولانا ڈاکٹر عطاء الرحمن جمعیت علمائے پاکستان کے نجیب الرحمن نے خطاب کیا۔

مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا کے مسلمان مظلوم فلسطینی عوام سے اظہار یکجہتی کر رہے ہیں کیونکہ اسرائیل غاصب نے گزشتہ ستر سال سے فلسطین میں جو مظالم ڈھائے ہیں اس کی تاریخ انسانی میں مثال نہیں ملتی ایک قوم کی سر زمین پر قبضہ کیا پھر انہیں زبردستی اپنے گھروں سے نکالا اور پھر ان پر ظلم و تشدد کی انتہا کردی اب اسرائیل کا یوم حساب قریب آچکا ہے۔ مسجد اقصی اور قدس کے وارث دنیا کے ڈیڑھ ارب مسلمان ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل غاصب اور جعلی ریاست ہے جسے دنیا کے غیرت مند مسلمان اور اقوام عالم تسلیم کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں۔ عرب حکمران اگر بیت المقدس اور قبلہ اول کا سودا کرتے ہوئے امت مسلمہ سے خیانت کے مرتکب ہو رہے ہیں تو یہ ان ممالک کے عوام کا فیصلہ نہیں ہے بلکہ غیر منتخب غیر جمہوری اور ناجائز حکمرانوں کا فیصلہ ہے جو اسرائیل اور امریکہ کے سامنے سجدہ ریز ہو چکے ہیں۔ 39 ملکوں کا نام نہاد لشکرِ کہاں ہے ان بزدلوں کو کوئی بتائے کہ قبلہ اول بیت المقدس جل رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل آج تاریخ کی کمزور ترین پوزیشن پر ہے۔ جب کہ آزادی بیت المقدس کے لئے فلسطینیوں کے شانہ بشانہ دنیا بھر کے غیرت مند مسلمان قربانی دے رہے ہیں جن عظیم شہدا نے القدس کی آزادی کے لئے اپنے لہو کا نذرانہ پیش کیا بیت المقدس اور فلسطین کی آزادی تک ان کے مشن کو جاری رکھیں گے۔

حکومت پاکستان کی جانب سے مظلوم فلسطینیوں کی حمایت بائیس کروڑ عوام کے جذبات کی ترجمانی ہے مگر ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ پاکستان زبانی حمایت سے آگے بڑھ کر عملی طور پر فلسطینی عوام اور مجاہدین فلسطین کی مدد کرے۔

تصویری جھلکیاں:

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
1 + 10 =