۳۱ فروردین ۱۴۰۳ |۱۰ شوال ۱۴۴۵ | Apr 19, 2024
ڈاکٹر شفقت شیرازی

حوزہ/ قم المقدسہ میں  مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبۂ امور خارجہ اور مجلس علمائے امامیہ پاکستان کے سربراہ حجۃ الاسلام ڈاکٹر شفقت شیرازی نے قائدِ انصار الله يمن سيد عبدالملك حوثی کے یمن میں شیعہ جعفریہ کے امور و روابط کے نمائندے علامہ سید یحییٰ طالب الشريف کے ساتھ ایک خصوصی ملاقات کی ہے۔

حوزه نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، ایران کے شہر قم المقدسہ میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبۂ امور خارجہ اور مجلس علمائے امامیہ پاکستان کے سربراہ حجۃ الاسلام ڈاکٹر شفقت شیرازی نے قائدِ انصار الله يمن سيد عبدالملك حوثی کے یمن میں شیعہ جعفریہ کے امور و روابط کے نمائندے علامہ سید یحییٰ طالب الشريف کے ساتھ ایک خصوصی ملاقات کی، ملاقات میں مجلس وحدت مسلمین قم کی کابینہ، مؤسسہ باقرالعلوم اور مجلس وحدت شعبۂ امور خارجہ کے شعبۂ ابلاغ عامہ کے ممبران شریک تھے۔

اسرائیلی مظالم نے ساری دنیا میں اسرائیل کو رسوا کر دیا ہے، علامہ شفقت شیرازی

اس موقع پر میزبان حجۃ الاسلام ڈاکٹر شفقت شیرازی نے معزز مہمانوں کو حاضرین کا تعارف کرانے کے ساتھ ساتھ انہیں مجلس وحدت مسلمین کی فعالیت، اہداف اور تاریخ سے بھی آگاہ کیا۔

انہوں نے غزہ پر اسرائیلی مظالم کے خلاف یمن کے مؤقف اور اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ فلسطینیوں کی مقاومت رنگ لائے گی اور اسرائیل کی شکست یقینی ہے۔ اسرائیل اندر سے کھوکھلا ہو چکا ہے اور عورتوں و بچوں پر حملے کر کے اپنی شکست کو چھپانے کی ناکام کوشش کر رہا ہے۔

اسرائیلی مظالم نے ساری دنیا میں اسرائیل کو رسوا کر دیا ہے، علامہ شفقت شیرازی

علامہ سید یحییٰ طالب الشرف کے دفتری انچارج السید سلیم المنتصر نے اپنی گفتگو میں اہل یمن اور ملت پاکستان کے درمیان محبت و اخوت اور بھائی چارے پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ استعماری طاقتیں کسی قسم کے انسانی حقوق یا انسانی زندگیوں کا احترام نہیں کرتیں۔ یمن نے اپنی خودمختاری اور آزادی کیلئے بہت زیادہ قربانیاں دی ہیں۔ فلسطین کے درد کو یمنی بہتر انداز میں سمجھتے ہیں۔ اپنے فلسطینی بھائیوں کی مدد کیلئے ہم ان کے ساتھ میدان میں کھڑے ہیں۔ ناکامی اور شکست ظالموں کا نصیب ہے۔ اسرائیل کا خاتمہ یقینی ہے۔ فلسطینیوں کی مقاومت کے باعث جلد ہی امت مسلمہ کو ایک بڑی فتح کی نوید ملے گی۔

مہمان خصوصی علامہ سید یحییٰ طالب الشریف نے کہا کہ ملت پاکستان اور اہل یمن کے درمیان گہرا دینی و اسلامی رشتہ ہے۔ تمام ممالک کے مسلمانوں کو باہمی روابط اور ثقافتی تعلقات مزید مضبوط کرنے کی ضرورت ہے۔ اگر مسلمان آپس میں متحد ہوتے تو آج غزہ میں یوں ظلم نہ ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ اپنی مقاومت کے باعث فلسطین ہمیشہ باقی رہے گا اور فلسطینیوں پر ظلم کرنے والے اسرائیل کا خاتمہ یقینی ہے۔ ہم ہر ممکنہ طریقے سے ملت فلسطین کی حمایت اور دفاع کرنا واجب سمجھتے ہیں۔ غزہ میں مقاومت کر کے فلسطینیوں نے شجاعت، بہادر اور دوراندیشی کی ایک نئی اور لازوال تاریخ رقم کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا میں پائے جانے والے سارے اسلامی ممالک کو اتحاد بین المسلمین کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسرائیل کے خلاف اٹھ کھڑا ہونا چاہیے۔

اسرائیلی مظالم نے ساری دنیا میں اسرائیل کو رسوا کر دیا ہے، علامہ شفقت شیرازی

حاضرین نے یمن کے حالات اور فلسطین کی حمایت کے حوالے سے معزز مہمانوں سے سوال و جواب بھی کئے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اہل یمن پاکستانی بھائیوں سے بہت محبت کرتے ہیں اور اس محبت کی جڑیں ہماری دینی، ثقافتی اور اسلامی تاریخ میں ہیں۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .