۱۲ آذر ۱۴۰۱ |۹ جمادی‌الاول ۱۴۴۴ | Dec 3, 2022
4bvc26e1ee0fd61py1p_800C450-2.jpg

حوزہ/ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں پولیس اہلکاروں نے عزاداروں پر حملہ کر دیا جس میں کم از کم 40 عزاداران سید الشہداء زخمی ہوگئے۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق،پولیس نے 200 سے زائد کشمیری عزاداروں کو گرفتار کر لیا۔

سنیچر کے روز تاسوعائے حسینی کے موقع پر عزاداروں پر حملہ کیا گیا ۔ یہ حملہ اس وقت کیا گیا جب عزاداران سید الشہداء تاسوعا کے جلوس نکالنے کی تیاری کر رہے تھے۔

الجزیرہ نے اپنی رپورٹ میں لکھا کہ ہندوستان کے پولیس اہلکاروں نے حضرت سید الشہداء علیہ السلام کا سوگ منانے والے عزاداروں کی مجلس پر حملہ کیا۔

بعض رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عزاداروں پر آنسو گیس کے گولے داغے گئے اور پلیٹ گنوں کا بھی استعمال کیا گیا۔

پولیس نے جلوس میں شریک عزاداروں کو منتشر کرنے کے لئے ان ہتھیاروں کا استعمال کیا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ عزاداروں پر پولیس کے حملے میں کم از کم 40 افراد زخمی ہوئے جبکہ بعض ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ 30 عزادار شدید طور پر زخمی ہوئے جنہیں اسپتال میں داخل کرا دیا گیا ہے۔

اس سے پہلے جمعے کے روز بھی سرینگر میں مجالس  عزا اور جلوسوں پر پابندی عائد کئے جانے کے خلاف مظاہرے ہوئے تھے اور پولیس نے عزاداروں کے خلاف بھرپور طاقت کا استعمال کیا تھا۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
1 + 1 =