۱۷ آذر ۱۴۰۱ |۱۴ جمادی‌الاول ۱۴۴۴ | Dec 8, 2022
علامه اشفاق وحیدی

حوزہ/ موجودہ دور میں عالم اسلام  کے حکمرانوں کو امت واحدہ کی شکل میں دنیا میں تصویر کو پیش کرنا ہو گا۔

حوزہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، حجۃ السلام و المسلمین اشفاق وحیدی نے میلبورن کے العصر سوسائٹی آف آسٹریلیا میں خطبہ نماز جمعہ کے اجتماع سے عوام الناس میں تیزی کے ساتھ برھتی ہوئی بے چینی اور در پیش مشکلات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امت مسلمہ کو جو چیلنجز در پیش ہیں وہ دہشت گردی انتہا پسندی اور فرقہ واریت ہے جس کی سرپرستی اسرائیل اور اس کے حواری کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا نوجوانوں کو آزادی خود مختاری کے نام پر دین اور اسلام سے دور کیا جا رہا ہے ۔ مزید کہا کہ جس معاشرے کا نوجوان مذہب سے دور ہے وہ معاشرہ کبھی بھی ترقی نہیں کر سکتا، سعودی اور امارات کے حکمرانوں نے ہمیشہ اسلام کو بدنام کیا۔

مولانا موصوف کا کہنا تھا کہ موجودہ دور میں عالم اسلام کے حکمرانوں کو امت واحدہ کی شکل میں دنیا میں تصویر کو پیش کرنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیشہ استعمار نے اسلام کا لبادہ اوڑھنے والے نام نہاد حکمرانوں کو خرید کر اسلام اور مذہب کو بدنام کیا جس کا کردار سعودی اور امارات میں نظر آتا ہے، امام خمینی رح اور رہبر معظم کی پالیسیوں نے ایسے رہنماؤں کو ہمیشہ بے نقاب کیا، جس کے نتیجے میں آئے روز جمہوری اسلامی ایران پر بے بنیاد اور غیر قانونی پابندیاں کا سامنا ہے
اشفاق وحیدی نے ملک پاکستان کے موجودہ سیاسی حالات پر اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ملک پاکستان کو ایک مخلص اور دیانتدار قیادت کی ضرورت ہے۔

مولانا وحیدی نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کے حکمران جو زبان استعمال کر رہے ہیں یہ جمہوریت اور سیاست کے خلاف ہے،آج پاکستان میں سیاست علوی کو عوام کو آشنا کرانا ہوگا،اگر تمام سیاسی اور مذہبی حکمران سیاست علوی کو جمہوریت اور اپنی پالیسیوں کا حصہ بنا لیں تمام تر مشکلات بے روزگاری غربت دھشت گردی انتہا پسندی فرقہ واریت کا حل ممکن ہے اور ملک مستحکم اور عوام خوشحال ہو سکتی ہے۔

لیبلز

تبصرہ ارسال

You are replying to: .
4 + 4 =